سپر پاور موذی وائرس کے سامنے بے بس؟ امریکہ میں کورونا کی تازہ ترین صورتحال کیا ہے؟

سپر پاور موذی وائرس کے سامنے بے بس؟ امریکہ میں کورونا کی تازہ ترین صورتحال ...
سپر پاور موذی وائرس کے سامنے بے بس؟ امریکہ میں کورونا کی تازہ ترین صورتحال کیا ہے؟

  

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکہ میں کورونا وائرس تاحال بے قابو ہے۔ ملک بھرمیں ریکارڈ ملازمتو ں کا خاتمہ ہوچکا ہے ، معیشت مسلسل خسارے میں جارہی ہے جبکہ وائٹ ہاوس میں مقیم ایک اور عہدیدار میں کورونا وائرس کی تصدیق کردی گئی ہے۔ 

امریکی ریاست جارجیا نے سات ہفتوں پر محیط طویل لاک ڈاون کے بعد اب فیکٹریوں کھولنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

رائٹرز کے مطابق امریکی صدر ٹرمپ کے خادم خاص میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد نائب صدر مائیک پنس کی پریس سیکرٹری کیٹی ملر بھی اس مرض میں مبتلا ہوگئی ہیں۔ کیٹی ملر میں کورونا وائرس کی موجودگی کی تصدیق خود امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کی ہے۔

کیٹی ملرٹرمپ کے ساتھی اور امیگریشن پالیسی کےحوالے سے سخت موقف رکھنے والے سٹیفن ملر کی اہلیہ ہیں اور نائب صدر کے ساتھ اکثر سفر کرتی رہتی ہیں۔

وائٹ ہاوس کی ترجمان کائیلغ میکنی کاکہنا ہے کہ امریکی صدر اور نائب صدر کے قریب رہنے والوں میں وائرس کی موجودگی سے سوال پیدا ہوتے ہیں کہ آیا صدر اور نائب صدر اس وائرس سے محفوظ ہیں یا نہیں اس لیے صدر کے تحفظ کیلئے ہم ایک ایک پہلو کا جائزہ لے رہے ہیں اور حفاظتی اقدامات کررہے ہیں۔

دوسری جانب امریکی محکمہ محنت کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار میں بتایاگیا ہے اس وبا کی وجہ سے امریکا میں بے روزگاری کی شرح میں گزشتہ ماہ تک 14اعشاریہ 7فیصد اضافہ ہوچکا ہے جبکہ فروری میں امریکا میں بے روزگاری کی شرح تین اعشاریہ پانچ فیصد تھی۔

ادھر وائٹ ہاوس کے مشیر برائے معیشت کیون ھیزٹ کہتے ہیں کہ معیشت کے حوالے سے بدترین خبریں ابھی آنا باقی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بے روزگاری کی شرح پوسٹ ورلڈ وار کے دس اعشاریہ آٹھ فیصد کا ریکارڈ توڑ چکی ہے۔

رپورٹس کے مطابق امریکا میں اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے 78,200افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ اس وقت وہاں رجسٹرڈ کیسز کی تعدادتیرہ لاکھ سے زیادہ ہے جبکہ ایک لاکھ تراسی ہزار افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -