”اے آر وائی کا بس نہیں چلتا ورنہ پوری سندھ حکومت کو ارطغرل کے ہاتھوں مروا دیں“اینکر پرسن ثنا بچہ کا دلچسپ تبصرہ

”اے آر وائی کا بس نہیں چلتا ورنہ پوری سندھ حکومت کو ارطغرل کے ہاتھوں مروا ...
”اے آر وائی کا بس نہیں چلتا ورنہ پوری سندھ حکومت کو ارطغرل کے ہاتھوں مروا دیں“اینکر پرسن ثنا بچہ کا دلچسپ تبصرہ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک طرف نجی نیوز چینل اے آر وائی کی جانب سے اپوزیشن اور سندھ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانے کے بارے میں سب کو علم ہے تو دوسری جانب آجکل ترک ڈرامہ ارطغرل غازی کا چرچا پاکستان میں زور شور سے ہے ہرکوئی اپنی باتوں میں ارطغرل ڈرامے کا ذکر کرتا نظر آتا ہے ،ایسے ہی اینکر پرسن ثنا بچہ نے دلچسپ انداز میں اس حوالے سے تبصرہ کیا ہے ۔مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر انہوں نے اے آر وائی کی جانب سے دی گئی دو خبروں کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے کہا کہ ARY والوں کا بس نہیں چل رہا ورنہ پوری سندھ حکومت کو ارطغرل کے ہاتھوں مروا دیں۔ اس طرح کی صحافت 1971 میں "نصرت" جیسے اخبار کیا کرتے تھے۔شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار۔

مزید :

قومی -