لوگ کام پر نہیں جارہے لیکن موسم اچھا ہو تو کہاں جاتے ہیں؟ گوگل نے پول کھول دیا

لوگ کام پر نہیں جارہے لیکن موسم اچھا ہو تو کہاں جاتے ہیں؟ گوگل نے پول کھول دیا
لوگ کام پر نہیں جارہے لیکن موسم اچھا ہو تو کہاں جاتے ہیں؟ گوگل نے پول کھول دیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں لاک ڈاﺅن کے سبب شہریوں کی اکثریت گھروں میں مقید ہے لیکن ایسے میں لوگ سب سے زیادہ کس جگہ پر جا رہے ہیں؟ گوگل کے ڈیٹا سے اس حوالے سے حیران کن انکشاف سامنے آ گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق برطانوی محکمہ صحت کے ماہر پروفیسر سٹیفن پوویس نے گزشتہ روز وزیراعظم ہاﺅس میں کورونا وائرس کے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے گوگل کا ڈیٹا بھی پیش کیا جس سے معلوم ہوا کہ سب سے زیادہ لوگ گھروں میں رہ رہے ہیں اور گھروں کے بعد لوگ ضروری اشیاءکی خریداری کے لیے دکانوں اور فارمیسی وغیرہ پر نہیں بلکہ سیر کے لیے پارکس میں جا رہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق جب سے لاک ڈاﺅن کیا گیا ہے گوگل ڈیٹا کے مطابق رہائشی علاقوں میں لوگوں کی تعداد زیادہ ہو گئی ہے۔ دوسرے نمبر پر لوگ پارکس میں سب سے زیادہ جا رہے ہیں تاہم موسم کے لحاظ سے ان کی تعداد میں کمی وبیشی ہوتی رہتی ہے۔ جب موسم اچھا ہو تو بہت زیادہ تعداد میں لوگ پارکس کا رخ کرتے ہیں۔ تیسرے نمبر پر لوگ اشیائے ضروریہ کی دکانوں اور میڈیکل سٹورز پر جا رہے ہیں۔ گوگل ڈیٹا کے مطابق کام کی جگہوں، ٹرین سٹیشز اور شراب خانوں جیسے مقامات پر لوگوں کی تعداد تیزی سے کم ہوئی ہے اور اب تک منفی 60سے منفی 80فیصد تک گر چکی ہے۔واضح رہے کہ برطانیہ میں اب تک کورونا وائرس کے 2لاکھ 11ہزار مریض سامنے آ چکے ہیں اور 31ہزار 241اموات ہو چکی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -