سمیڈاکے توسط سے ایک لاکھ طلبا ﺅ طالبات انٹرنشپ حاصل کر سکیں گے‘شفقت حسین نغمی

سمیڈاکے توسط سے ایک لاکھ طلبا ﺅ طالبات انٹرنشپ حاصل کر سکیں گے‘شفقت حسین ...

لاہور(کامرس رپورٹر)سمال اینڈ میڈیم انٹر پرائزز ڈویلپمنٹ اتھارٹی ”سمیڈا“ کے انٹرنشپ پروگرام کے توسط سے رواں سال کے دوران تقریباََ ایک لاکھ طلبا ﺅ طالبات ایس ایم ای سیکٹر میں انٹرنشپ حاصل کر سکیں گے۔ اس امر کا انکشاف ادارے کی طرف سے تشکیل دئیے جانے والے انٹرشپ پروگرام کی افتتاحی تقریب کے دوران کیا گیا۔وفاقی سیکرٹری صنعت و پیداوار شفقت حسین نغمی تقریب کے مہمان خصوصی تھے جبکہ لاہور ایوان صنعت و تجارت کے صد ر انجینئر سہیل لاشاری ، ممتاز صنعتکار اور سابق مینجنگ ڈائریکٹر لاہور سٹاک ایکسچینج عارف سعید اور پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران نے تقریب میں اعزازی مہمان کے طور پر خطاب کیا ۔جبکہ سمیڈا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر سردار احمد نواز سکھیرا نے خطبہئِ استقبالیہ پیش کیااور حاضرین کو مذکورہ انٹرنشپ پروگرام کے حوالے سے تشکیل دی گئی نئی پورٹل ” "internship.smeda.org"کے بارے میں بھی بریفنگ دی۔تقریب میں صنعت ، تجارت اور تعلیم کے شعبوں سے وابستہ اہم سرکاری و نجی اداروں کے سربراہان کے علاوہ طلباءو طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔تقریب میں سمیڈا کے بورڈ ممبر عدیل رﺅف، سابق صدر لاہور چیمبر فاروق افتخار، میا ں مصباح الرحمٰن اور رحمت اللہ جاوید سمیت کاروبار برادری کے نمائیدے کثیر تعداد میں موجود تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وفاقی سیکرٹری شفقت حسین نغمی نے اس وقت ہائر ایجوکیشن سے متعلقہ اداروں میں کل 14 لاکھ 89 ہزار 93 طلبا و طالبات کی رجسٹریشن موجود ہے اور پڑھے لکھے نوجوانوں کی اتنی بڑی تعداد صنعتی وتجارتی شعبہ کی خدمت کیلئے دستیاب ہیں۔ لیکن افسوس کہ تعلیمی اداروں اور کاروباری شعبہ کے مابین مو ¾ ثر رابطے کے فقدان کی وجہ سے یہ ٹیلنٹ اپنی تعلیمی صلاحیتوں کو آزما نہیں پاتا۔ انہوں نے امید کی کہ سمیڈ ا کا انٹرنشپ پروگرا م اس خلا ءکو پر کرنے موثر ذریعہ ثابت ہو گا اور اس ضمن میں تشکیل دیا گیا۔

 پورٹل آجر و ں اور اجیروں کیلئے یکساں طور پرفائدہ مند ثابت ہوگا۔نیز اس سے تعلیمیافتہ نوجوانوں میںبے روزگاری کی شرح میںکمی واقع ہوگی۔ انہوں نے سمیڈا کے انٹرنسپ پروگرام کو سراہا اور یقین دہانی کرائی کہ حکومت ایسے افزائش روزگار اور کاروباری ترقی کے منصوبوں کی بھرپور معاونت کرے گی۔سمیڈا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر سردار احمد نواز سکھیر نے کہا کہ سمیڈا نے قومی معیشت کی ترقی کیلئے اپنی سمت اور دائرہئِ کار کو بدلتے ہوئے تقاضوں کے مطابق تبدیل کر لیا ہے۔ اور اب ہمارے منصوبوں کا محور چھوٹے کاروبار اور نوجوان طبقہ ہے۔انہوں نے کہا انفارمیشن ٹیکنالوجی نے دنیا کو سکیڑ کر ایک گلوبل ویلیج میں ڈھال دیا ہے اور ہم کوشش کر رہے ہیں کہ اپنے ترقیاتی منصوبوں میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور جدید ذرائع ابلاغ کا زیادہ استعمال کریں۔ انہوں نے کہا کہ آئیندہ ماہ اس حوالے سے ایس ایم ای کلب کے نام سے ایک نیا اور اچھوتا منصوبہ متعارف کرا یا جا رہا ہے جو ملک بھر کے ایس ایم ایز کو نہ صرف مربوط کر دے گا ۔ بلکہ انہیں کاروباردی ترقی کی خدمات گھر بیٹھے میسر کر دے گا۔انٹرنشپ پروگرا م کے حوالے سے سمیڈاکے چیف ایگزیکٹو آفیسر نے بتا یا کہ مذکورہ پروگرام کا مقصد ملک کے مختلف تعلیمی اداروں اور یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل ہونےوالے طلباءطالبات کیلئے صنعت و حرفت سے متعلق نجی و سرکاری اداروں میں پیشہ وارانہ کام کے تجربہ کی راہیں کھولنا ہے تاکہ وہ اس تجربہ کی بنیاد پر آسانی کے ساتھ اپنے عملی کیرئیر کا آغاز کرسکیں۔دوسری طرف سمیڈا کے انٹرنشپ پروگرام کے تحت ایس ایم ای سیکٹر کیلئے بھی ہنر مند اور تعلیمافتہ افرادی قوت کا حصول آسان ہو جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اس پروگرام کی کامیابی کو یقینی بنانے کیلئے ملک بھر کے تعلیی اور کاروباری اداروں کے اشتراک سے ایک وسیع نیٹ ورک تشکیل دیا جارہاہے۔

مزید : کامرس