قانون بدل گیا ،اپوزیشن بلدیاتی الیکشن کا پہلا مرحلہ’ جیت‘ گئی

قانون بدل گیا ،اپوزیشن بلدیاتی الیکشن کا پہلا مرحلہ’ جیت‘ گئی
قانون بدل گیا ،اپوزیشن بلدیاتی الیکشن کا پہلا مرحلہ’ جیت‘ گئی

  

لاہور ( خبر نگار خصوصی)پنجاب میں بلدیاتی الیکشن میں حکومتی ضد کے باوجود اپوزیشن پہلا مرحلہ ’جیت‘ گئی ہے جس کے تحت بلدیاتی الیکشن عدالتی فیصلے کی روشنی میں جماعتی بنیادوں پر کرانے کیلئے لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013میں ترمیم کردی گئی ہے ۔یہ ترمیم اسمبلی کے بجائے گورنر کے آرڈیننس کے ذریعے کی گئی ہے اور نوے روز میں اس کی اسمبلی سے منظوری لی جائے گی ۔گورنر پنجاب کی طرف سے جاری ہونے والے ہنگامی ترمیمی قانون (آرڈننس)کے تحت لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 کے انتخابی انعقاد کی شق میںجہاں لفظ غیر جماعتی درج تھا اسے کے بجائے ’جماعتی ‘شامل کردیا گیا ہے۔گورنر کی طرف سے آردننس جاری ہونے سے قبل صوبائی کابینہ نے اس کی منظوری دی اور پھر گورنر نے دستخط کرکے جاری کردیا۔یہاں یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ 2013 ءکی منظوری کے عمل میں پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں طویل بحث کی گئی تھی جس میں’ننھی ‘سے اپوزیشن کے ساتھ ساتھ حکومتی اراکین کی بڑی تعداد نے بھی جماعتی بنیادوں پر الیکشن کرانے کی تجوز دی تھی لیکن حکومت نے یہ تجویز ردکردی تھی اور قانون منظور کرلیا تھا ۔ اپوزیشن اور حکومتی اراکین کی بڑی تعداد کا کہنا تھا کہ بلدیاتی الیکشن غیرجماعتی بنیادوں پر کرانے اور اس میں بعض اختیارات کا منبع چیف منسٹرکو بنانے سے آئینی تقاضے پورے نہیں ہوتے اور یہ میثاقِ جمہوریت کے بھی منافی ہوگا ۔دو مرتبہ بحث کرانے کے بعد حکومت نے عددی اکثریت کی بنا پر یہ قانون بھاری اکثریت سے منظور کیا تھا اور اپوزیشن نے اسے عدالت میں چیلنج کردیاتھا جہاں فیصلہ حکومت کیخلاف الیکشن جماعتی بنیادوں پر کرانے کے حق میں کیا گیا۔ترمیمی قانون کی کاپی الیکشن کمیشن کو بھی نو¿بھجوادی گئی ہے ۔

مزید : لاہور /اہم خبریں