نئی نسل کو تعلیمات اقبال سے روشناس کرانا ہو گا،بلال شیرازی

نئی نسل کو تعلیمات اقبال سے روشناس کرانا ہو گا،بلال شیرازی

لاہور(پ ر) مسلم لیگ( ق)کے رہنما و مسلم لیگ یوتھ ونگ کے مرکزی صدر سید بلال مصطفی شیرازی نے کہا ہے کہ علامہ محمد اقبالؒ امت مسلمہ کی جغرافیائی ،سیاسی ،سماجی آزادی کے ساتھ ساتھ معاشی خودمختاری بھی چاہتے تھے ، قائداعظم محمد علی جناحؒ اور حکیم الامت علامہ محمد اقبال ؒ جیسی ہستیوں کی فکر کو بھولنا سب سے بڑی بدقسمتی ہے۔انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال ؒ نے ملت اسلامیہ کے نوجوانوں کو شاہین سے تعبیر کرتے ہوئے ان میں عقابی روح کو بیدار کرنے کیلئے فکروعمل کی نئی راہیں متعین کیں۔اقبال کے پاکستان کو موجود ہ سنگین سیاسی،سماجی ،معاشی صورتحال سے نکالنے کے لیے مصور پاکستان کے افکارونظریات اور تعلیمات کی روشنی میں نوجوانوں کے عملی کردار کی ادائیگی وقت کا اولین تقاضا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ہاؤس میں مسلم لیگ یوتھ ونگ کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سید بلال شیرازی نے اقبال کی شاعری کو ہر دور کے لیے زندہ و جاوید قرار دیتے ہوئے کہا کہ کلام اقبال مردہ اذھان کو زندہ، بے حسی کے اندر جوش، جذبہ اور ولولہ انگیزی بھر دینے والا اور فکری تاریکیوں میں روشنی دکھاتا ہے اور منزل کا پتہ دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال ؒ کے فکری رویوں سے نئی نسل کو روشناس کروانے کے لیے تعلیمی اداروں میں "تعلیمات اقبال "کو لازمی مضمون پڑھایا جانا چاہیے تاکہ آنے والی نسلیں اپنے اصل ہیروز کو پہچان سکیں اور اپنی ملی و قومی ذمہ داریوں کا فہم و ادارک حاصل کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ نوجوان اقبال کے تصور خودی کے سمندر میں ڈوب کر اپنی پوشیدہ صلاحیتوں کا علم و عرفان حاصل کرتے ہوئے ممکنات اور امیدوں کے جہاں کی سیر کرسکتے ہیں جو ان کے ارادوں، امیدوں، حوصلوں اور صلاحیتوں کو جلابخشنے کے لیے "مینارہ رُشد و ہدایت"ثابت ہوسکتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1