انٹرنیٹ پر محبت ، امریکی لڑکی شادی کرنے کے لئے پاکستان پہنچ گئی

انٹرنیٹ پر محبت ، امریکی لڑکی شادی کرنے کے لئے پاکستان پہنچ گئی
انٹرنیٹ پر محبت ، امریکی لڑکی شادی کرنے کے لئے پاکستان پہنچ گئی

  

نوشہرہ ورکاں(نمائندہ خصوصی) انٹرنیٹ پر محبت امریکی لڑکی اپنا پیار پانے پاکستان نوشہرہ ورکاں پہنچ گئی۔ دونوں قوت گویائی اور سماعت سے محروم ہیں پاکستانی لڑکے اور امریکی لڑکی کا نکاح نوشہرہ ورکاں میں اہل خانہ کی موجودگی میں ہوا مگر نکاح رجسٹر نہ ہوسکا۔ 31 سالہ ڈیزی روزا سٹراجن وزٹ ویزا پر پاکستان آئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق محلہ اسلام پورہ نوشہرہ ورکاں کا رہائشی رانا احسن جو قوت گویائی اور قوت سماعت سے محروم ہے اور اسپیشل ایجوکیشن کالج لاہور میں فورتھ ائیر کا طالبعلم ہے ۔رانا احسن کی انٹرنیٹ پر امریکہ کے شہر فونکس کی رہائشی 31سالہ ڈیزی روزا سٹراجن سے دوستی ہوگئی اور وہ بھی قوت گویائی اور سماعت سے محروم ہے۔ ڈیزی روزا مذہبی طور پر کرسچین ہے اورایک فوڈ کمپنی میں بطور کلرک کام کرتی ہے ایک سال میں دوستی پیار میں بدلنے پر ڈیزی روزا سٹراجن 14روز کے وزٹ ویزا پر پاکستان آ گئی جسے کا ائیرپورٹ سے رانا احسن نے اپنی فیملی کے ہمراہ استقبال کیا اور تین نومبر کو دونوں نے احسن کے اہل خانہ اور دیگر گواہان کی موجودگی میں شادی کے بندھن میں بندھ گئے جبکہ ڈیزی روزا سٹراجن نے اپنی فیس بک آئی ڈی پر شادی کے بندھن میں بندھنے کا سٹیٹس بھی اپ ڈیٹ کر دیا ہے اور دونوں نے ازدواجی زندگی گزارنا شروع کر دی لیکن نوبیاہتا جوڑے کا نکاح رجسٹر نہ ہوسکا ہے۔ ذرائع کے مطابق ڈیزی روزکے والد سیموئیل سٹراجن نے اسے چھوڑ دیا تھا جبکہ والدہ سیلویا لائن فوت ہوچکی ہے۔ پاکستانی قوانین کے مطابق نکاح رجسٹریشن کے لیے ایمبیسی لیٹر یا والدین کا اجازت نامہ لازمی ہے۔ گزشتہ روز رانااحسن کے والد نے اسسٹنٹ کمشنر احسان اللہ کدھر کو نکاح رجسٹرڈ کرنے کے لیے درخواست دے دی ہے۔ امریکی دوشیزہ ڈیزی روزا سٹراجن 12 نومبر کو واپس امریکہ چلی جائے گی جبکہ نوبیاہتا جوڑا ہنی مون منانے اسلام آباد پہنچ گیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر