جسٹس (ر) سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ تعینات کرنے کا نوٹیفیکشن جاری

جسٹس (ر) سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ تعینات کرنے کا نوٹیفیکشن جاری
 جسٹس (ر) سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ تعینات کرنے کا نوٹیفیکشن جاری

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)حکومت نے گورنر سندھ عشرت العباد کو عہدے سے ہٹا کر جسٹس ریٹائرڈ سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ تعینات کرنے کا نوٹفیکیشن جاری کر دیا گیاہے ۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق صدر ممون حسین نے سعید الزماں کو گورنر سندھ تعینات کرنے کی وزیراعظم کی سمری پر دستخط کر دیئے ہیں جس کے بعد نوٹفیکیشن جاری کر دیا گیاہےجبکہ وہ عہدے کا حلف کل اٹھائیں گے۔ذرائع کا کہناہے کہ  وزیر اعظم نواز شریف اور صدر مملکت ممنون حسین کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ صدر مملکت نے ممنون حسین نے سعید الزمان صدیقی کو گورنر سندھ بنانے کی منظوری دی ۔

جسٹس ریٹائرڈ سعید الزمان صدیقی چیف جسٹس پاکستان بھی رہ چکے ہیں ،سعید الزمان صدیقی نے پرویز مشرف کے پی سی اوکے تحت حلف اٹھانے سے انکار کیا تھا، سعید الزمان صدیقی سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس بھی رہ چکے ہیں۔نجی نیوز چینل اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے سعید الزمان صدیقی نے کہا کہ مجھے حکومت کی طرف سے اس بارے میں باضابطہ طور پر کچھ نہیں بتا یا گیا اور نہ ہی نوٹی فیکیشن ملا ۔ان کا کہنا تھا کہ گورنر سندھ بنانے کے حوالے سے خبریں میڈ یا پر نظر آئیں،اگر عہدے کی آفر ہوئی تو ضرور قبول کروں گا ۔عشرت العباد کے کردار کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر انہوں نے کہا کہ موجودہ گورنر سندھ 13سال تک اس عہدے پر رہ چکے ہیں اور انہوں نے بہت سے اچھے کام کیے ہیں جن میں سے ایک یہ ہے کہ عشرت العباد تمام لوگوں اور جماعتوں کو ساتھ لے کر چلے ۔واضح رہے کہ گورنر سندھ عشرت العباد27دسمبر 2002کو گورنر سندھ بنے تھے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں