بھارتی سٹاک مارکیٹ میں صرف 15منٹ میں لوگوں کے6لاکھ کروڑ ڈوب گئے ، وجہ ٹرمپ کی جیت نہیں بلکہ مودی ہیں کیونکہ ۔۔۔

بھارتی سٹاک مارکیٹ میں صرف 15منٹ میں لوگوں کے6لاکھ کروڑ ڈوب گئے ، وجہ ٹرمپ کی ...
بھارتی سٹاک مارکیٹ میں صرف 15منٹ میں لوگوں کے6لاکھ کروڑ ڈوب گئے ، وجہ ٹرمپ کی جیت نہیں بلکہ مودی ہیں کیونکہ ۔۔۔

  

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارتی حکومت کی جانب سے 5سو اور 1ہزار کے نوٹوں پر پابندی کے فیصلے نے سرمایہ کاروں کو ڈبو دیا ، بمبئی سٹاک مارکیٹ میں صرف 15منٹ کے دوران لوگوں کے 6لاکھ کروڑ خسارے کی نظر ہو گئے ۔

انڈیا ٹائمز کے مطابق مودی سرکار کے فیصلوں نے سرمایہ کاروں کا مستقبل داﺅ پر لگا دیا ، حکومت کی جانب سے 5 سو اور 1ہزار والے کرنسی نوٹو ں پر پابندی سے بمبئی سٹاک مارکیٹ شدید مندی کا شکار ہو چکی ہے اور آج کاروبار کے آغاز کے بعد صرف پندرہ منٹ میں سرمایہ کار6لاکھ کروڑ سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ۔

امریکی انتخابات کے نتائج : پاکستان سٹاک ایکس چینج میں مندی ، ٹوکیو سٹاک مارکیٹ بھی گر گئی

ایک جانب امریکا میں صدارتی انتخابات ہو رہے ہیں جہاں عوام نے روزگار کا نعرہ لگانے والے ریپبلکن امیدوارڈونلڈ ٹرمپ کو آئندہ چار سال کیلئے اپنا 45واں صدر منتخب کر لیا ہے تو دوسری طرف امریکا کا اہم ترین اتحادی نریندر مودی اپنے ملک میں سرمایہ کاروں کے درپے ہے ۔

امریکی انتخابات کے نتائج کے بعد نہ صرف پاکستان سٹاک ایکس چینج بلکہ ٹوکیو سٹاک مارکیٹ میں بھی شدید مندی کا رجحان جاری ہے مگر حیران کن طور پر ان نتائج کے اثرات بمبئی سٹاک ایکس چینج پر رونما نہیں ہوئے ۔ بمبئی سٹاک مارکیٹ کے گرنے کی وجہ نریندر مودی کا یہ فیصلہ بن رہا ہے جس میں انہوں نے ملک میں 5سو اور ہزار والے کرنسی نوٹو ں پر پابندی عائد کر دی ہے ۔ اس فیصلے نے صرف پندرہ منٹ میں ہی لوگوں کے اربوں کھربوں روپے ڈبو دیے ہیں ۔

کاروباری سرگرمیوں کے پہلے پندرہ منٹ کے دوران بمبئی سٹاک ایکس چینج میں مشترکہ سرمائے 57,3827.36کروڑ کے خسارے کے بعد 111لاکھ کروڑ سے105لاکھ کروڑ کی سطح پر آگیا ہے۔

مودی حکومت کی طرف سے کرنسی نوٹوں پر پابندی کے فیصلے کو عوامی حلقوں میں پزیرائی مل رہی ہے مگر اس فیصلے سے رئیل سٹیٹ سیکٹر اور سونے کی مارکیٹ کو شدید نقصان پہنچے گا ۔ کاروبار کے دوران سنسیکس میں تقریباُُ 16سو پوائنٹس کی کمی دیکھی گئی ہے جو 25اگست کے بعد ابتک کی بڑی کساد بازاری تصور کی جا رہی ہے ۔

مزید : بزنس