نئے کاروباری اداروں کے موضوع پر اسلام آباد چیمبرمیں سمینار کا انعقاد

نئے کاروباری اداروں کے موضوع پر اسلام آباد چیمبرمیں سمینار کا انعقاد

  



اسلام آباد (آن لائن) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے ہلٹ پرائز پاکستان، گلوبل انٹرپرینیورشپ نیٹورک، انٹرنیشنل ڈیٹا گروپ اور ورجن ٹیز پاکستان کے اشتراک سے نئے کاروباری اداروں کے موضوع پر چیمبر میں ایک سمینار کا انعقاد کیا جس میں گلوبل ینگ لیڈر اور ورلڈ اکنامک فورم کے ٹیکنالوجی پائیونیئر مارک ٹیرل نے شرکاء کو نیا کاروبار شروع کرنے کے بارے میں اپنے تجربات سے آگاہ کیا اور اس سلسلے میں انہیں ضروری معلومات فراہم کیں۔مارک ٹیرل ہلٹ انٹرنیشنل بزنس سکول میں سٹریٹیجی کے پروفیسر ہیں اور بزنس کے موضوع پر بعض کتابوں کے مصنف بھی ہیں۔ اس کے علاوہ وہ ایک کلسلٹنگ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر بھی ہیں۔سمینار سے خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر کے صدر شیخ عامر وحید نے کہا کہ پاکستان میں نوجوانوں کی آبادی میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے جبکہ ہر سالوں لاکھوں نوجوان جاب مارکیٹ میں داخل ہو رہے ہیں لیکن روزگار کے مواقع نہ ہونے کی وجہ سے ان میں مایوسی پھیل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مسئلے کا بہتر حل نوجوانوں کو کاروبار کی طرف راغب کرنا ہے لہذا حکومت کو چاہیے کہ وہ اپنا کاروبار شروع کرنے کی کوششوں میں نوجوانوں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرے اور انہیں اس سلسلے میں مطلوبہ سہولیات فراہم کرے جس سے ملک میں غربت و بے روزگاری کم ہو گی ، عوام کا معیار زندگی بہتر ہو گا اور اقتصادی سرگرمیوں میں بھی تیزی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نوجوانوں کیلئے کاروبار دوستانہ پالیسیاں تشکیل دے تا کہ زیادہ سے زیادہ نوجوان اپنا کاروبار شروع کر کے معیشت کی ترقی میں فعال کردار ادا کر سکیں۔

ا

سلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد نوید اور نائب صدر نثار مرزا نے کہا کہ ہمارے نوجوان بہت با صلاحیت ہیں اور اپنا کاروبار شروع کرنے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں کیونکہ ان کے پاس بہت سے بزنس آئیڈیاز ہوتے ہیں لیکن سرمایہ اور مالی مدد کے بغیر انہیں کاروبار شروع کرنے میں مشکلات پیش آتی ہیں۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ حکومت نوجوانوں کو کاروبار کیلئے آسان شرائط پر قرضے فراہم کرے تا کہ وہ کاروبار کے میدان میں اپنا مستبقل بہتر بنا سکیں۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ینگ انٹرپرینیور ز فورم کے چیئرمین رافعت فرید نے نوجوانوں کی ترقی کیلئے اپنے ادارے کی کاوشوں پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ عرصہ بے روزگار رہنے کی وجہ سے نوجوان کسی بھی منفی سرگرمی میں ملوث ہو سکتے ہیں لہذا انہیں کاروبار کی طرف راغب کرنے کیلئے حکومت سازگار ماحول فراہم کرے کیونکہ نوجوانوں کو تعمیری سرگرمیوں میں مصروف کرنے کا یہی سب سے بہتر حل ہے۔مارک ٹیرل نے کہا کہ سٹارٹ اپ گرائنڈ دنیا کے تین سو شہروں میں انٹرپرنیورشپ کو فروغ دینے کیلئے کام کر رہا ہے تا کہ نوجوانوں کو کاروبار کی طرف راغب کر کے دنیا کا مستقبل بہتر بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ ہر معاشرہ انٹرپرنیورز کیلئے کاروبار کے بہت سے مواقع فراہم کرتا ہے لہذا انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ معاشرے کے اہم مسائل کو حل کرنے کیلئے نئی نئی پراڈیکٹس تیار کرنے پر توجہ دیں جس سے ان کے کاروبار کو بہتر کامیابی حاصل ہو گی۔نوجوانوں کی بڑی تعداد نے سمینار میں شرکت کی اور کامیاب کاروبار شروع کرنے کیلئے مارک ٹیرل سے متعدد سوالات کئے جن کے تفصیلی جوابات دیئے گئے۔ ۔#/s#

مزید : کامرس


loading...