ترکی 3 سال کے اندر بلند آمدنی والے ملکوں میں شامل ہو جائے گا

ترکی 3 سال کے اندر بلند آمدنی والے ملکوں میں شامل ہو جائے گا

  



استنبول (اے پی پی) ترکی کے وزیر اعظم بن علی یلدرم کا کہنا ہے کہ ترکی تین برسوں کے اندر درمیانی آمدن کے حامل ملکوں کے گروپ سے نکلتے ہوئے بلند آمدنی والے گروپ میں شامل ہو جائے گا۔ترک نشریاتی ادارے کے مطابق ترکی کے وزیر اعظم یلدرم نے ایرزنجان دفتر گورنر اور بلدیہ کے زیر اہتمام "کاروباری دنیا اور شہری تنظیموں کے نمائندوں سے ملاقات کے موقع پر اپنے خطاب میں کہا کہ ترکی نے 15 برسوں میں حاصل کردہ اعتماد اور استحکام کی وساطت سے ایک طویل سفر طے کیا ہے۔ترکی کے اس سفر میں سن 2002 ء سے 2017 ء تک تین گنا ترقی کرنے کے عقب میں اعتماد اور استحکام کی حقیقت پوشیدہ ہونے کا ذکر بھی کیا گیا۔

کرنے والے جناب یلدرم نے بتایا کہ اگر اس قدر مضبوط اقتدار، اعتماد اور استحکام کا ماحول پیدا نہ ہوتا تو کوئی بھی مستقبل کے حوالے سے سرمایہ کاری نہ کرتا۔انہوں نے ترکی کے طے کردہ سفر کے ابھی بھی ناکافی ہونے پر زور دیتے ہوئے آئندہ کے تین برسوں کے لیے منصوبہ بندی کیے جانے کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ ترکی درمیانی سطح کی آمدنی کے حامل ملک سے بلند سطح کی آمدنی والے ملک کا درجہ حاصل کرے گا، یعنی ہم فی کس قومی آمدنی کو 13 ہزار ڈالر سے بھی آگے لیجائیں گے، شرح نمو 5.5 فیصد سے زائد ہو گی، ہم ہر برس لاکھوں ہم وطنوں کو روزگار فراہم کریں گے۔ترکی کے پہنچنے والے مرحلے پر توجہ مبذول کراتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہماری اس کامیابیوں کو ہر گز نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ لیکن ہم ان پر ہی اکتفا نہیں کریں گے۔ یہ خطہ مشکلات سے بھرا ہوا ہے اور جغرافیہ ہماری قسمت ہے ہم اسے اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے پر مجبور ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ہم خطے میں شام و عراق میں انسانی المیہ میں مظلوموں سے بغلگیر ہونے والے واحد ملک ہیں۔

مزید : کامرس


loading...