نجی شعبے کی مشاورت سے نئی تجارتی پالیسی کی تشکیل کااعلان خوش آئند ہے : پیاف

نجی شعبے کی مشاورت سے نئی تجارتی پالیسی کی تشکیل کااعلان خوش آئند ہے : پیاف

  



لاہور(کامرس رپورٹر)پیاف نے وفاقی وزیر تجارت محمد پرویز ملک کی طرف سے نجی شعبے کی مشاورت سے نئی تجارتی پالیسی کی تشکیل کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ برآمدات میں اضافہ کے لئے سٹیک ہولڈرز کی مشاورت از حد ضروری ہے ۔ نئی تجارتی پالیسی میں برآمدات میں اضافہ کیلئے مراعات ،خصوصی پیکیج اور ٹیکسوں میں کمی کا اعلان کیا جائے تاکہ ملکی برآمدات میں اضافہ کے ساتھ ساتھ حکومتی ریونیو میں اضافہ سے حکومت مالی بحران سے نمٹ سکے ۔ملکی برآمدات پالیسیز میں نجی شعبہ کی مشاورت نہ ہونے کی وجہ سے پچھلے تین سالوں سے گراوٹ کا شکار ہیں۔

برآمدات میں کمی کی اہم وجوہات میں بجلی گیس کی لوڈ شیڈنگ کے ساتھ ساتھ ان کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ بھی ہے کیونکہ مہنگی بجلی اور گیس کے باعث پیدوار مہنگی ہونے سے بین الاقوامی مارکیٹ میں پاکستانی اشیاء مہنگی ہونے کے باعث ان کی مانگ میں کمی ہورہی ہے جبکہ دیگر ہمسایہ ممالک میں صنعتی مقاصد کیلئے پاکستان کی نسبت بجلی اور گیس سستی فراہم کی جارہی ہے اس لیے ضرورت اس امر کی ہے کہ پاکستان میں بھی صنعتی مقاصد کیلئے بجلی و گیس کی قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ ملکی برآمدات بڑھ سکیں اور تجارتی خسارہ میں کمی واقع ہو۔

مزید : کامرس


loading...