گلوکاری مشکل فن ، روزانہ ریاضت کی ضرورت ہے،حنا فرید

گلوکاری مشکل فن ، روزانہ ریاضت کی ضرورت ہے،حنا فرید
 گلوکاری مشکل فن ، روزانہ ریاضت کی ضرورت ہے،حنا فرید

  



لاہور (فلم رپورٹر ) گلوکارہ حنا فریدنے کہا ہے کہ گلوکاری بڑا مشکل فن ہے اور اس کے لئے روزانہ ریاضت کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اداکاری علیحدہ صنف ہے اور گلوکاری اس سے بالکل مختلف چیز ہے ، اگر آپ دو ماہ تک کسی ڈرامے میں اداکاری نہ کریں تو سکرپٹ اور ریہرسل کے ذریعے آپ اس کردار کو ادا کر سکتے ہیں مگر گلوکاری ایک ایسا فن ہے جس کو روزانہ ریاضت کی ضرورت ہے ۔ ملکہ ترنم نور جہاں ، استاد نصرت فتح علی خاں اور مہدی حسن جیسے بڑے گلوکار بھی روزانہ گانے کی ریاضت کرتے تھے اور میں نے بھی ریاضت کے لئے دو ٹائم مقرر کر رکھے ہیں اور روزانہ چار گھنٹے کی ریاضت کرتی ہوں اور یہی وجہ ہے کہ میری آواز کا ردم آج تک برقرار ہے ۔

حنا فریدنے کہا کہ مجھے ملکہ ترنم نور جہاں کی گائیکی نے زیادہ متاثر کیا ہے ، میری دلی خواہش ہے کہ میں بھی ان کے نقش و قدم پر چلتے ہوئے اپنا نام پیدا کر جاؤں ۔

مزید : کلچر


loading...