ایف بی آر عدالتی احکامات پر عملدرآمد کرے ، کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی ، جسٹس شاہد جمیل خان

ایف بی آر عدالتی احکامات پر عملدرآمد کرے ، کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی ، ...

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ٹیکسٹائل ملز کو بجلی بلوں میں سیلز ٹیکس سے استثنیٰ نہ دینے کے خلاف درخواست پر چیئرمین ایف بی آر طارق پاشا کو 29 نومبر کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دے دیاہے۔ عدالت نے فیصلے کو نظرانداز کرنے پر چیئرمین ایف بی آر پر سخت اظہار برہمی بھی کیاہے۔مسٹر جسٹس شاہد جمیل خان نے فیروز ٹیکسٹائل ملز کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے محمد محسن ورک ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ حکومت نے ٹیکسٹائل سیکٹر سے بجلی بلوں میں سیلز ٹیکس وصولی کو زیرو ریٹڈ قرار دیا ہے لیکن اس کے باوجود بجلی بلوں میں ٹیکسٹائل ملز سے سیلز ٹیکس وصولی کی جارہی ہے، ایف بی آر کو سیلز ٹیکس وصولی سے استثنیٰ کی درخواستیں دے رکھی ہیں، لیکن ایف بی آر ان درخواستوں پر فیصلہ نہیں کررہا، انہوں نے کہا کہ گزشتہ سماعت پر ممبر لیگل نے عدالت کے روبرو معاملہ حل کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی لیکن اس کے باوجود معاملہ حل نہیں کیا گیا، عدالت نے ایف بی آر کے ممبر لیگل کے پیش نہ ہونے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ ایف بی آر کو عدالتی احکامات پر عملدرآمد کرنا ہوگا، عدالتی احکامات پر عمل درآمد میں کوتاہی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی،عدالت نے چیئرمین ایف بی آر کو حکم دیا کہ آئندہ سماعت پر تحریری وضاحت کے ساتھ ذاتی حیثیت میں پیش ہوں، عدالت نے کیس پر مزید سماعت 29نومبر تک ملتوی کردی۔

ایف بی آر

مزید : علاقائی