ایک بار پھر مارشل لاء لگانے کی تیاریاں کی جارہی ہیں،جاوید ہاشمی

ایک بار پھر مارشل لاء لگانے کی تیاریاں کی جارہی ہیں،جاوید ہاشمی

  



اسلام آباد (این این آئی)سینئرسیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ ایک بار پھرملک میں مارشل لاء لگانے کی تیاریاں کی جارہی ہیں، سیاستدان اب پھر ان کے آلہ کار بنیں گے۔مردم شماری کا تنازع کھڑا کرکے ملک کے حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ٗنوازشریف کیخلاف فیصلہ دینے والے پانچ ججوں میں سے 4نے مشرف دور میں حلف اٹھایا ہوا ہے۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جاوید ہاشمی نے کہا کہ پاکستان میں آج جو باتیں ہو رہی ہیں، وہ پاکستان کے وجود کے لیئے انتہائی خطرناک ہیں، میں اکیلا اتنے بڑے خطرات کو روک نہیں سکتا، میں نے کئی دفعہ سیاست کے رخ بدلے،اسمبلیوں میں جا کر استعفی دے کر کئی دفعہ حالات کے رخ بدلے،انہوں نے کہا کہ سیاست میری روح ہے، میرا اہم ترین ہتھیارسیاست ہے،ریٹائرڈ جنرل طارق خان نے ٹی وی پر اعتراف کیا کہ وہ عمران خان کے ساتھ مل کر آئین کا کھلواڑ کرنا چاہتے تھے،جو میں کہتا تھا آج وہ جنرل (ر)طارق کہہ رہے ہیں، آج ٹیکنوکریٹ حکومت بنانے کی باتیں کھل کر کی جارہی ہیں۔ جب بھی آئین کا کھلواڑ کیا تو عدالت عظمی نے زیادہ تباہی مچائی۔جن ججوں نے پلاٹ لینے کیلئے جھوٹے حلف اٹھائے ہوئے ہیں،ان کے فیصلوں نے آج پوری دنیا میں پاکستان کو مذاق بناکررکھ دیا ہے۔یہ وہی سپریم کورٹ ہے جس کے سابق چیف جسٹس افتخار چودھری نے میری ضمانت کی درخواست پانچ سال نہیں سنی جب سنی تو مسترد کر دی ، پھر ایک فیصلہ آیا جس میں مجھ سے معافی مانگی گئی اور مجھے ضمانت دی گئی،انہوں نے کہا کہ جو اس ملک پر عدلیہ کے ذریعے گزرتی رہی، اس ملک کے آئین کا چہرہ بگاڑ کر رکھ دیا گیا، آج وہی فارمولا جو میں کہتا تھا وہی جنرل (ر)طارق ٹی وی پر بیٹھ کرکہہ رہے ہیں۔جج حضرات عدالت کو بے حیثیت کر دیتے ہیں۔سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کی نااہلی کا فیصلہ بھی غلط تھا تاہم انہیں توہین عدالت میں سزادی گئی،انہوں نے کہا کہ جوڈیشل مارشل لاء کا سلسلہ جاری ہے،اورایسے فیصلے سنائے جارہے ہیں جس سے آئین اورملک کا حلیہ بگاڑا جارہا ہے،انہوں نے کہا کہ عدلیہ اور فوج کے پاس غلطی کی کوئی گنجائش نہیں ہوتی،سیاستدان اپنی غلطیوں سے سبق سیکھتے ہیں،انہوں نے کہا کہ بے شک ہمارے سیاستدانوں نے بے پناہ غلطیاں کی لیکن مارشل لاء غیر تحریری آئین ہے، سپریم کورٹ کے پاس جب بھی آئین کے فیصلے کرنے کا اختیار آیا، انہوں نے تباہی مچا دی،نوازشریف کیخلاف پانچ ججوں نے فیصلہ دیا جن میں سے 4 نے پرویز مشرف کے ہوتے ہوئے کا حلف اٹھایا ہواہے۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف یا ان کے بچوں نے پیسے کمائے تو ٹھیک نہیں کیا،میں نے اپنے باپ کی جائیداد بیچی، میرا سب کچھ قوم کے سامنے ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں مارشل لاء لگ نہیں سکے گا لیکن مارشل لاء کی تیاریاں مکمل کی جا رہی ہیں، ملک کے سیاستدان دوبارہ اسی طرح آلہ کار بنیں گے ۔

جاوید ہاشمی

مزید : صفحہ اول


loading...