پبی میں پولیس نے بدقماش عناصر کیخلاف کمر کس لی

پبی میں پولیس نے بدقماش عناصر کیخلاف کمر کس لی

  



پبی ( نما ئندہ پاکستان) نوشہرہ پولیس نے سنگین جرائم میں ملوث مجرمان اشتہاریوں ،سود ایکٹ ،ہوائی فائرنگ ،کرایہ دار ایکٹ میں خاطر خواہ کارکردگی کے لیے کمر کس لی اور سماج دشمن عناصر کے خلاف طبل جنگ بجا دیا محکمہ پولیس میں جزاء وسزا کے عمل سے نکھار پیداہوا ہے ۔ اپنی بہترین پیشہ ورانہ صلاحیتوں کوبروئے کار لاتے ہوئے جرائم پیشہ افراد کی سرکوبی کا عمل جاری رکھیں۔ اچھے اخلاق ،بے لوث خدمت سے سرشار ہو کر عوامی خدمت کو اپنا نصب العین بنائیں۔نوشہرہ پولیس کے ہر اہلکار کی کارکردگی کو باریک بینی سے جانچا جاتا ہے۔اچھی کارکردگی کے حامل پولیس اہلکاروں کو انعامات سے نوازا جاتا ہیں۔ڈی پی اؤ کیپٹن(ر)واحدمحمود(پی ایس پی)کا نوشہرہ پولیس لائن میں تقسیم تقریب انعامات کے موقع پر شرکاء سے خطابتفصیلات کے مطابق ضلع بھر کے تین سرکل کے ایس ڈی پی اوز،9 تھانہ جات کے ایس ایچ اوز،انچارج شعبہ تفتیش ،انچارج چوکیات ،تھانہ جات کے محرروں کی کارکردگی کی بنیاد پر مقابلہ کیا جاتا ہے۔اس سلسلے میں پولیس لائن میں ایک سادہ پروقار تقریب تقسیم انعامات کا انعقاد کیا گیا۔تقریب میں ایس پی انوسٹی گیشن ثناء اللہ خان تینوں سرکل کے ایس ڈی پی اوز ،ایس ایچ اوز،انچارج شعبہ تفتیش ،انچارج چوکیات،تھانہ جات کے محررز نے شرکت کی ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی پولیس سربراہ نے کہا کہ محکمہ پولیس میں جزاء وسزا کے عمل سے نکھار پیداہوا ہے ۔اچھے اخلاق ،بے لوث خدمت سے سرشار ہو کر عوامی خدمت کو اپنا نصب العین بنائیں۔نوشہرہ پولیس کے ہر اہلکار کی کارکردگی کو باریک بینی سے جانچا جاتا ہے۔جس میں مجرمان اشتہاریوں ،منشیات فروشوں ،اغوا برائے تاوان ،ہوائی فائرنگ ،کرایہ داری ایکٹ،اہم اور حساس مقامات کی سیکیورٹی چیک کرنا ،نان کسٹم پیڈ گاڑیوں ،مشتبہ افراد ،بغیر نمبر پلیٹ موٹر سائیکل،قومی شاہراہوں سے تجاوزات ہٹانا،جرائم کے خلاف فوری انسدادی کاروائی عمل میں لانا،تھانہ جات اور چوکیات کی صفائی ستھرائی کے اہداف شامل ہوتے ہیں۔سرکل ایس ڈی پی اوز میں ایس ڈی پی او پبی سرکل لقمان خان نے اول ،تھانہ جات میں ایس ایچ اوتھانہ کینٹ ذرداد خان نے اول ،شعبہ تفتیش میں تھانہ اضاخیل کے OII اختر حسین نے اول ،انچارج چوکیات میں اے ایس آئی ریاض اللہ انچارج چوکی جلوزئی نے اول جبکہ 9 تھانہ جات کی سطح پر محرران میں تھانہ پبی کے محرر شوکت علی نے اول پوزیشن حاصل کر کے ٹرافیاں و نقد انعام اپنے نام کیے۔اس موقع پر ضلعی پولیس سربراہ نے مذید کہا کہ اپنی بہترین پیشہ ورانہ صلاحیتوں کوبروئے کار لاتے ہوئے جرائم پیشہ افراد کی سرکوبی کا عمل جاری رکھیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...