تنگی کونسل کے ممبران کا صحافی پر تشدد ناقابل برداشت ہے ،سبز علی

تنگی کونسل کے ممبران کا صحافی پر تشدد ناقابل برداشت ہے ،سبز علی

  



چارسدہ (بیور و رپورٹ) تنگی کونسل کے ممبران کا صحافی پر تشدد۔واقعہ کے بعد تنگی پولیس نے کونسل کے دو ممبران اور ڈرائیور کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے ۔چارسدہ پریس کلب نے ہنگامی اجلاس واقعہ کی شدید مذمت کی اور حملے کو صحافت پر حملہ قرار دیا ۔ واقعہ پر کسی صورت خاموش نہیں بیٹھیں نگے ۔ صدر سبزعلی خان ترین ۔ تفصیلات کے مطابق تحصیل تنگی کونسل کا اجلاس زیر صدارت مشتاق خان جاری تھا کہ اس دوران کونسل کے بعض ممبران نے چارسدہ پریس کلب کے سینئر صحافی اور نجی ٹیلی ویژن کے نمائندے نصراللہ خان خٹک کو کوریج کرنے سے روک لیا۔ اجلاس میں وقفہ کے دوران کونسل کے ممبران آفتاب خان ،منظور بشیر خان اور زاہد گل کے ڈرائیور عبد اللہ نے نصراللہ خٹک کو تشدد کا نشانہ بنایا اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دی ۔ تنگی پولیس نے تینوں ملزمان کے خلاف دفعہ506,337A1,423اور 355کے تحت مقدمات درج کرکے مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔ دریں اثناء واقعہ کے حوالے سے چارسدہ پریس کلب کا ہنگامی اجلاس زیر صدار ت صدر سبز علی خان ترین منعقد ہوا۔ اجلاس میں جنرل سیکرٹری احسان شیر پاؤ ، نائب صدر کفایت اللہ ، جائنٹ سیکرٹری عدنان علی شاہ ، آفس سیکرٹری سراج علی اور گورننگ باڈی کے اراکین سمیت جنرل باڈی کے ممبران نے شرکت کی۔ اجلاس میں واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ۔ اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے چارسدہ پریس کلب کے صدر سبز علی خان ترین نے واشگاف الفاظ میں کہا کہ واقعہ کھلی دہشت گردی اور صحافت پر قدغن ہے جس پر کسی صورت خاموش نہیں بیٹھ سکتے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...