اوپن لیٹرز پر چلنے والی گاڑیوں کی حوصلہ شکنی کی جائے، مکیش چاولہ

اوپن لیٹرز پر چلنے والی گاڑیوں کی حوصلہ شکنی کی جائے، مکیش چاولہ

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات مکیش کمار چاولہ نے گاڑیوں کے اوپن لیٹرز پر چلائے جانے کی خبروں کا نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری اور ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کو ہدایت کی ہے کہ وہ فوری طور پر اس معاملے کو حل کریں۔ یہ بات انہوں نے بدھ کو اپنے دفتر میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکریٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات عبدالحلیم شیخ ، ڈائریکٹر جنرل شعیب احمد صدیقی اور دیگر افسران نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل شعیب احمد صدیقی نے بتایا کہ عام طور پر ٹریفک پولیس گاڑیوں کے کاغذات چیک کرتی ہے اور اوپن لیٹرز پر گاڑیاں سڑک پر لانے والوں کے خلاف کارروائی بھی کرتی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ گذشہ ایک سال کے دوران محکمہ ایکسائز نے 147494 گاڑیاں رجسٹرڈ کی ہیں جن میں سے 90172 گاڑیاں پرائیوٹ تھیں، 14023 کمرشل گاڑیاں تھیں جبکہ 43299 موٹر سائیکلیں شامل تھیں۔ شعیب صدیقی نے کہا کہ عام طور پر محکمہ ایکسائز سال میں تین سے چار مرتبہ روڈ چیکنگ مہم منعقد کرتا ہے اس مہم کے دوران گاڑیوں کے کاغذات اور ٹیکس وغیرہ چیک کئے جاتے ہیں۔ اس موقع پر صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسداد منشیات مکیش کمار چاولہ نے گاڑیوں کے مالکان پر زور دیا کہ وہ گاڑیاں اپنے نام ٹرانسفر کروائیں تاکہ انہیں ٹریفک پولیس اور محکمہ ایکسائز کی جانب سے چیکنگ کی صورت میں کسی ناخوشگوار صورتحال کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

مزید : کراچی صفحہ آخر