فکرِ اقبال کے فروغ میں ہی ہماری بقاء ہے ذوالفقار چیمہ

فکرِ اقبال کے فروغ میں ہی ہماری بقاء ہے ذوالفقار چیمہ

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)مفکر پاکستان کے 140واں یوم پیدائش کے سلسلے میں علامہ اقبال کونسل اور رُوٹس میلینئیم سکولز کے اشتراک سے آج پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس میں ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔ تقریب میں طلباء و طالبات کے درمیان "علاّمہ اقبال۔شخصّیت اور پیغام" کے عنوان سے انگریزی اور اُردو میں تقریری مقابلہ کا انعقاد بھی کیا گیا، جس میں طلباء و طلبات نے جوش و خروش سے حصّہ لیا۔ اس تقریب میں تعلیمی اداروں کے سربراہان ،دانشوران ، سرکاری افسران، اساتذہ ا ور طلباء وطالبات نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔ تقریب میں مہمان خصوصی چئیرمین علامہ اقبال کونسل ذوالفقار احمد چیمہ معروف شاعر ، پروفیسر انور مسعود ، نیشنل بک فاؤنڈیشن کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر انعام الحق جاوید، رُوٹس میلینئیم سکولز کے ایم ، ڈی فیصل مشتاق اور ڈائریکٹر سبینہ ، ڈاکٹر نجیبہ عارف، رابعہ کیانی اور ڈاکٹر منظور علی نے بھی شرکت کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سابق آئی جی پولیس اور معروف دانشور ذوالفقار احمد چیمہ نے کہا کہ زندہ قومیں اپنے محسنوں کے دن شایانِ شان طریقے سے مناتی ہیں ، جو قومیں اپنے محسنوں کو بھلا دیتی ہیں زمانہ انہیں فراموش کردیتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پوری دنیا اس بات پر متفق ہے کہ اقبال کا کلام الہامی اور پیغام آفاقی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہماری نوجوان نسل کو اقبال کے احسانات اور خدمات سے روشناس کرانا ضروری ہے ۔اقبال کی شاعری کسی ایک دور کی نہیں بلکہ ہر عہد میں مشعل راہ ہے۔ فکرِ اقبال کے فروغ میں ہی ہماری بقاء ہے ،اقبال کا خواب پاکستان تا قیامت زندہ و تابندہ رہے گا۔انہوں نے کہا اقبال نے مسلم امہ کو احساسِ کمتری کے اندھریوں سے نکالا تھا مگر ہم آج پھر اُسی کا شکار ہیں ۔ نوجوانوں کے ذہن اقبال نورِ بصیرت سے منور کرنے کی ضرورت ہے۔ معروف شاعر پروفیسر انور مسعود نے کہا کہ علامہ اقبال زندہ و پائندہ عالمگیر شخصیت ہیں ۔ علامہ نہ صرف ہمارا ماضی ہیں بلکہ ہمارا حال اور مستقبل بھی ہیں ۔ اگر ہم ایک زندہ ، عمل کرنے والی اور احساسِ خودی رکھنے والی قوم ہیں تو ہمیں اقبال کے فلسفے ، ان کی فکر اور سوچ کو ساتھ لیکر چلنا ہوگا۔ آج بھی دنیا میں بہت سی قومیں فکر اقبال سے کسبِ فیض کرتی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اقبال نے پوری اُمت مسلمہ کی رہنمائی کی اور اُن کا کلام ہمیں قرآن و اسلام کے قریب لے جاتا ہے کیونکہ اقبال مفسرِقرآن بھی ہے۔ فیصل مشتاق نے کہا کہ نوجوانوں کو فکرِ اقبال سے راہنمائی لینی چاہیے ۔ اقبال عالم اسلام کے ہی نہیں بلکہ پوری دنیا اور پسی ہوئی انسانیت کے بھی شاعر ہیں ۔ تقریب کے آخر میں معروف شاعر اور ادیب اور نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے ایم ڈی ڈاکٹر انعام الحق جاوید اور پروفیسر زاہد مسعود نے تقریری مقابلوں کے فیصلوں کا اعلان کیا ۔ سٹیج سیکریٹری کے فرائض معروف شاعر علی یاسر نے انجام دیئے ۔ مہمانوں نے جیتنے والے طلباء و طالبات میں انعامات تقسیم کئے ۔ انگریزی میں حفصہ اعجاز نے پہلی پوزیشن حاصل کرکے دس ہزار روپے کا انعام جیتا اور اردو میں فاطمہ عامر نے اول پوزیشن حاصل کی انہیں بھی دس ہزار روپے اور کتابوں کا سیٹ دیا گیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر