جماعت اسلامی انتخابات،احتساب ساتھ ساتھ چاہتی ہے،راشد نسیم

جماعت اسلامی انتخابات،احتساب ساتھ ساتھ چاہتی ہے،راشد نسیم

  



راولپنڈی (نیوز رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان راشد نسیم نے کہا کہ انتخاب کا التواء نہیں چاہتے جماعت اسلامی احتساب اورانتخاب ساتھ ساتھ چاہتی ہے اسلامی قوتیں جمہوری اندازمیں ملک میں انقلاب اور تبدیلی چاہتی ہیں ان کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرکے ان کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے سے سیاسی خلفشاربڑھے گا ۔ان خیالات کااظہارانھوں نے جماعت اسلامی پنجاب شمالی کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر امرائے اضلاع شمس الرحمن سواتی،سیدعارف شیرازی، سجاداحمدعباسی،مولاناجابرعلی ،ابوعمیرزاہد،محمدوقاص خان سمیت دیگررہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔راشدنسیم نے کہاکہ انتخابات کو التوا میں ڈالا گیا تو یہ ملک کی بہت بڑی بدقسمتی ہوگی جس سے انتشار اور انارکی کا خطرہ بڑھ جائے گا ۔ پاکستان اس وقت کسی سیاسی خلفشار کا متحمل نہیں ہوسکتا ۔انھوں نے کہاکہ اسلام کا مستقبل روشن ہے امریکی ریسرچ کے ادارے تحقیقاتی رپورٹس میں اسلام کے پوری دنیا میں غالب ہونے کے اعلان کررہے ہیں خلفائے راشدہ کا نظام ہمارے لئے مشعل راہ ہے ۔ ملک میں ٹیکنوکریٹس کی حکومت کا شوشہ چھوڑنے والے سیاسی بحران میں مزید اضافہ چاہتے ہیں ،نیب سمیت دیگرادارے کرپٹ مافیا کااحتساب کرنے میں حقیقی کرداراداکریں توکسی کوملک لوٹنے کی جرات نہ ہو۔انھوں نے کہاکہ حکومت اوراپوزیشن ایسے بیانات سے گریزکریں جن سے افواہیں اورخدشات اجاگرہو ں اور قوم میں مایوسی پھیلے ملک پہلے ہی معاشی اور سیاسی طورپرعدم استحکام کا شکارہے ایسی افواہوں سے مزید نقصان ہوگا ۔انھوں نے کہا جماعت اسلامی کی شفاف لیڈرشپ اس ملک کے عوام کیلئے امیدکی کرن ہے کرپٹ سیاستدان پاکستان پردھبہ ہیں عوام انھیں ووٹ کی قوت سے مستردکے دیانتدارقیادت کا انتخاب کرے تاکہ ملک کی تقدیربدل سکے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر