وزارت توانائی نے عوام کی کھال اتارنے کا فیصلہ کر لیا، بجلی چوری کا90 ارب روپے کا خسارہ عوام سے وصول کیا جائے گا

وزارت توانائی نے عوام کی کھال اتارنے کا فیصلہ کر لیا، بجلی چوری کا90 ارب روپے ...
وزارت توانائی نے عوام کی کھال اتارنے کا فیصلہ کر لیا، بجلی چوری کا90 ارب روپے کا خسارہ عوام سے وصول کیا جائے گا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) بجلی چوری اور بل نہ دینے کاخسارہ ہمیشہ کی طرح عوام سے وصول کیا جائے گا، وزارت توانائی نے 90 ارب روپے خسارہ پورا کرنے کے لیے سفاشارت تیا کر لیں۔

نجی ٹی وی چینل 92 نیوز کے مطابق سرکاری اداروں کی نااہلی اور بد انتظامی کا خمیازہ اب عوام کو بھگتنا پڑے گا۔ ساڑھے چار سال حکومت یہ کہہ کر عوام کو خوش کرتی رہی کہ بجلی اور پٹرول کی قیمتیں کم ہو رہی ہیں لیکن حقیقت میں حکومت بجلی چوری کو روکنے اور بل کی سو فیصد وصولی کو یقینی بنانے میں ناکام رہی ہے، جس سے قومی خزانے کو نوے ارب روپے کا خسارہ ہوا ہے اور بجلی چوروں کو کٹہرے میں لانے کی بجائے ہمیشہ کی طرح یہ بوجھ بھی عوام پر ہی ڈالا جائے گا۔ وزارت توانائی کی نئی سفارشات کے مطابق نوے ارب روپے خسارے کا بوجھ عوام پر ڈالنے کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اٹلی کا فاشٹ حکمران مسولینی علامہ اقبال کے فلسفہ کا معترف تھا اور وہ مفکر پاکستان علامہ اقبال سے ملاقات کا خواہاں تھا

تفصیلات کے مطابق دس ارب روپے بجلی چوری اور چودہ ارب روپے بلوں کی عدم وصولی کا خسارہ بجلی صارفین پر مزید بوجھ ڈال کہ پورا کیا جائے گا، اور چار سالوں میں وفاقی حکومت کی طرف سے KPK کا 65 ارب روپے منافع بھی ادا نہیں کیا گیاوہ بھی اب ادا کیا جائے گا، اس حوالے سے وزارت توانائی نے سفارشات تیار کر وفاقی کابینہ کو بھیج دی گئی ہیں، وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد یہ بل نیپرا کر بھیجا جائے گا اور نیپرا کی منظوری کے بعد یہ خسارہ عوام کے خون سے نکالا جائے گا، مستقبل میں بجلی صارفین پر اتنا ٹیکس لگا دیا جائے گا کہ ان کے ہوش ٹھکانے آ جائیں گے۔

مزید : قومی