او آئی سی کشمیریوں کی حصولِ حق خود ارادیت کی جدوجہد کی بھر پور حمایت کرتی رہے گی: ڈاکٹر یوسف احمد العثمین

او آئی سی کشمیریوں کی حصولِ حق خود ارادیت کی جدوجہد کی بھر پور حمایت کرتی رہے ...
 او آئی سی کشمیریوں کی حصولِ حق خود ارادیت کی جدوجہد کی بھر پور حمایت کرتی رہے گی: ڈاکٹر یوسف احمد العثمین

  



جدہ (محمد اکرم اسد) او آئی سی کشمیریوں کی حصولِ حق خود ارادیت کی جدوجہد کی بھر پور حمایت کرتی رہیگی ان خیالات کا اظہار سیکرٹری جنرل او آئی سی ڈاکٹر یوسف احمد العثمین نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے او أئی سی ہیڈ کوارٹر میں "کشمیر لہو لہو" کے عنوان سے پاکستان سفارتخانہ اور او آئی سی کے تعاون سے منعقدہ سیمنار اور تصویری نمائش میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ او آئی سی سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ او آئی سی کشمیر کاز کی مکمل حمایت کرتی ہے اور تمام رکن ممالک کشمیری مسلمانوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور بھارتی مسلح فورسز کی جانب سے نہتے کشمیریوں پہ ہونے والے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہیں،سعودی عرب میں اسلامی تعاون تنظیم او آئی سی کے ہیڈ کوارٹر جدہ میں مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی ظلم وجبر کے حوالے سے تصویری نمائش کا انعقاد کیا گیا .

سفارت خانہ پاکستان کی جانب سے منعقدہ تصویری نمائش کی تقریب میں او آئی کے رکن ممالک کے سفارتی نمائندوں ، کشمیر پر او آی سی کے خصوصی نمائیندے عبداللہ العالم ، مبصرین، سعودی آفیشلز، صحافیوں اور پاکستانی کمیونٹی کے نمائندوں نے شرکت کی اس موقع پر ریاض سے خصوصی طور پر آئے سفیر پاکستان خان ھشام بن صدیق کا کہنا تھا کہ کشمیری گزشتہ ستر برس سے بھارتی ظلم اور جارحیت کا شکار ہو رہے ہیں، بھارت کو اقوام متحدہ کی قرادوں پر عمل کرتے ہوئے کشمیریوں کو حق خود ارادیت دینا ہوگا تاکہ پورے خطے میں امن کی فضا قائم۔ہو سکے، سفیر پاکستان نے پھر اس بات کا اعادہ کی کہ پاکستان کشمیریوں کی سیاسی، سفارتی و اخلاقی امداد کرتا رہیگا۔ کشمیر سے آئے کشمیریوں کے نمائندے سید فیض نقشبندی نے خطاب کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر کی تازہ صورتحال اور ۸ لاکھ بھارتی فوج کے ظلم و ستم اور انسانی حقوق کی پامالی سے آگاہ کیا انہوں نے کہا کہ نہتے کشمیریوں کے ساتھ خون کی ہولی کھیلی جا رہی ہے جبکہ اقوام عالم خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔انہوں نے اقوام متحدہ اور بلخصوص او آئی سے کہا کہ وہ کشمیریوں کو انکا مانا جانے والا حق دلایا جائے تاکہ وہ آزادی کے ساتھ رہ سکیں ۔

تقریب سے قونصل جنرل شہریار اکبر خان نے افتتاحی کلمات میں کہا کہ اس سیمنار کے انعقاد جو کہ اب ایک سالانہ ایونٹ بن گیا ہے کا مقصد 1947 میں بھارتی افواج کی کشمیر میں غیر قانونی آمد کی طرف توجہ دلانا ہے انہوں نے بین القوامی کمیونٹی سے مطالبہ کیا کہ وہ کشمیریوں جو انکا حق دلانے میں مدد کرے، نظامت کرتے ہوئے قونصل شائق احمد بھٹو بھی کشمیریوں پر ہونے والے ظلم و جبر سے آگاہی دلاتے رہے، آخر میں جدہ کشمیر کمیٹی کے چئیرمین مسعود احمد پوری کی قیادت میں کمیٹی نے سکریٹری جنرل کو کمٹی کے اجلاس میں کشمیر پر منظور کردہ قرارداد پیش کی اور ان سے مطالبہ کیا کہ اور اپنے دفتر کا استعمال کرتے ہوئے کشمیر کا مسئلہ حل کروائیں، بعد ازاں سکریٹری جنرل نے سفیر پاکستان ، قونصل جنرل کے ساتھ تصویری نمائش دیکھی.

مزید : عرب دنیا