100فیصد امید ہے ڈاکٹر عافیہ جلد پاکستان آرہی ہیں، فوزیہ صدیقی

100فیصد امید ہے ڈاکٹر عافیہ جلد پاکستان آرہی ہیں، فوزیہ صدیقی

اسلام آباد (آن لائن ) امریکا میں قید ڈاکٹر عافیہ کی بہن فوزیہ صدیقی نے انکشاف کیا ہے کہ امریکا نے ریمنڈ ڈیوس اور بریگیڈئیر برگ (بقیہ نمبر49صفحہ12پر )

ڈیل کے بدلے ان کی بہن کو پاکستان کے حوالے کرنے کی پیشکش کی تھی اس کے باوجود پاکستان نے عافیہ کی جگہ ’’کچھ اور‘‘ لینے کا فیصلہ کیا۔ ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فوزیہ صدیقی نے کہا کہ عافیہ کو صدر اوباما کی طرف سے صدارتی معافی کے آپشن کے وقت بھی پاکستان نے سستی دکھائی لیکن اب 100 فیصد امید ہے کہ ڈاکٹر عافیہ جلد پاکستان آ رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان 2003 سے اس معاملے پر اْن کے ساتھ ہیں، وہ کہہ چکے ہیں کہ عافیہ کو تنہا چھوڑنے والوں کو حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ڈاکٹر فوزیہ نے مزید کہا کہ عمران خان آمرانہ دور میں بھی عافیہ صدیقی کے ساتھ کھڑے رہے جب دوسرے خوفزدہ تھے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عافیہ اپنی بقیہ قید پاکستان میں گذار سکتی ہے امریکہ رضا مند ہے پاکستان کو عملی اقدامات کرنا ہوں گے اور قانونی تقاضے پورے کرنا ہوں گے پاکستان کو مجرمان کی وطن منتقلی کے معائدے پر دستخط کرنا ہوں گے ۔ فوزیہ صدیقی نے انکشاف کیا ہے کہ امریکا نے ریمنڈ ڈیوس کے بدلے عافیہ کو پاکستان کے حوالے کرنے کی پیشکش کی، امریکی پیشکش کے باوجود پاکستان نے عافیہ کی جگہ ’’کچھ اور‘‘ لینے کا فیصلہ کیا۔فوزیہ صدیقی نے خیال رہے کہ امریکی عدالت نے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو ستمبر 2010 میں 87 برس کی سزا سنائی تھی جس کے بعد سے وہ قید تنہائی کاٹ رہی ہیں۔

فوزیہ صدیقی

مزید : ملتان صفحہ آخر