ممبرپنجاب بارکونسل فرہاد علی شاہ کیخلاف مقدمہ درج کرنے کانوٹس،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کو انکوائری رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت

ممبرپنجاب بارکونسل فرہاد علی شاہ کیخلاف مقدمہ درج کرنے کانوٹس،ڈسٹرکٹ اینڈ ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس انوارالحق نے ممبرپنجاب بارکونسل سید فرہاد علی شاہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کانوٹس لے لیتے ہوئے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لاہور کوانکوائری کرکے 24گھنٹوں میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کردی ۔

چیف جسٹس سے لاہور ہائیکورٹ بارکے عہدیداروں نے ملاقات کی ،اس موقع پر ممبر پنجاب بارسید فرہاد علی شاہ بھی موقع پرموجودتھے۔بار عہدیداروں نے چیف جسٹس کو بتایا کہ تھانہ ڈیفنس کے انسپکٹرمحمد علی بٹ نے تھانہ اسلام پورہ میں بے بنیادمقدمہ درج کرایاہے،بارعہدیدار نے چیف جسٹس سے اس مقدمہ کی انکوائری کرانے کی استدعا کی ہے جس پرچیف جسٹس نے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لاہور کوانکوائری کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کردی۔ممبر پنجاب بار کونسل سید فرہاد علی شاہ نے بتایا کہ 2012ء سبزہ زار میں قتل ہونے والے 5افراد کے مقدمہ میں وہ وکیل ہیں ،اس کیس کے حوالے سے متعلقہ پولیس افسر نے گالیاں دینے کا الزام لگا کر ان کے خلاف کارسرکار میں مداخلت کا مقدمہ درج کرلیا۔ہمارا صرف اتنا مطالبہ ہے کہ انکوائری کرکے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔بے بنیاد الزامات لگاکر وکلاء کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کرنے کا سلسلہ اب بند ہوجاناچاہیے۔

ہدایت

مزید :

علاقائی -