بچے کی ہلاکت،نجی ہسپتال کے ڈاکٹر کیخلاف 52لاکھ ہرجانے کا دعویٰ

بچے کی ہلاکت،نجی ہسپتال کے ڈاکٹر کیخلاف 52لاکھ ہرجانے کا دعویٰ

لاہور(نامہ نگار)ڈلیوری کے دوران بچے کی ہلاکت پر شہری نے باجوہ ہسپتال کے ڈاکٹر افتخار احمد کے خلاف صارف عدالت میں 52لاکھ روپے ہرجانے کا دعوے دائر کردیا گیا ہے ۔عدالت نے درخواست گزار کے وکیل کو 10نومبر کو ابتدائی بحث کے لیے طلب کرلیاہے۔

صارف عدالت میں شاہدرہ کے محمد ندیم نے موقف اختیار کیا ہے کہ اس نے اپنی بیوی کو باجوہ ہسپتال میں چیک اپ کرایا تو ڈاکٹر اس کو نارمل ڈلیوری کا بتایا،آخری وقت تک اس کو تسلی دی جاتی رہی کہ ڈلیوری نارمل ہوگی لیکن اس کو معلوم نہیں تھا کہ ہسپتال میں کسی قسم کی سہولت موجود نہیں ،اس کی بیوی کی طبیعت زیادہ خراب ہوئی تو مذکورہ ڈاکٹر اسے کہنے لگا کہ اسے دوسرے ہسپتال علامہ اقبال ٹاؤن لے جاؤ وہ وہاں گیا لیکن اس کا بچہ تکلیف کی وجہ سے فوت ہو چکا تھا ،میرے بچے کی ہلاکت ڈاکٹر کی غفلت کی وجہ سے ہوئی ہے ،عدالت سے استدعاہے کی مذکورہ بالا ہرجانہ کی رقم دلوائی جائے۔

مزید : علاقائی