مسلمانوں کیلئے سب سے بہتر عمل توبہ اور موت کی یاد ہے ، مولانانذرالرحمن

مسلمانوں کیلئے سب سے بہتر عمل توبہ اور موت کی یاد ہے ، مولانانذرالرحمن

رائیونڈ، لاہور (آئی این پی، کرائم رپورٹر) سالانہ عظیم الشان عالمی تبلیغی اجتماع کے دوسرے مرحلے کا آغاز بعد نماز عصر مولانا نذرالرحمان کے بیان سے ہوگیا۔دوسرے مرحلہ میں فرزندان اسلام، شمالی ، جنوبی وزیرستان، بٹ خیلہ، مکران،وانا ،سوات،ڈیرہ اسماعیل ،گوادر، تربت، میران شاہ،کراچی لسبیلہ، فیصل آباد، ٹوبہ ٹیک سنگھ، مالا کنڈ، اور بیرون ملکوں سمیت لاکھوں کی شرکت امیر جماعت حاجی عبد الوہاب کی ہدایت کے مطابق مولانا نذرالرحمان نے اجتماع سے اپنے بیان میں کہا کہ اے مسلمان بھائیوں اس پنڈال میں جمع ہونے کا مقصد دنیا بھر میں اللہ کے دین کو دوسروں تک پہنچانا،دوسروں کے عیب کے بجائے ان کی خوبی تلاش کرناہے،اللہ کا ذکر نہ کرنے والے کی زندگی بیکار ،پریشانیوں سے نجات اللہ کے راستے میں نکلنے میں ہے،انسان ماں کے پیٹ سے آیا اور قبر کے پیٹ کی طرف دوڑ رہا ہے، مسلمان کے لئے سب سے بہتر عمل توبہ اور سوتے وقت رات موت سرہانے رکھو اور صبح اٹھو تو موت کو سامنے رکھو تاکہ موت یاد رہے، اس اجتماع کا مقصد امت مسلمہ کو دین کے راستہ پر ڈالنا اور سچے مسلمان بنانا ہے۔ رانا نذرالرحمان نے کہاکہ آؤ اس کار خیر کا حصہ بنیں اور اللہ کے دین کو دوسروں تک پہنچائیں اور خود بھی سیکھیں۔ مسلمانوں کی ذلت توبہ سے ختم ہوگی امت پر آفتیں دین سے دوری کی وجہ سے نازل ہورہی ہیں پریشانیوں سے نجات اللہ کی راہ میں نکلنے میں ہے آخر الزمان نبی ؐ کا فرما ن اور اللہ تعالی کے دین کو دوسروں تک پہنچانا ہم سب کی ذمہ داری ہے ،حضوراقدس ؐ کا ارشاد ہے کہ بہت سے لوگ ایسے ہیں جو دنیا میں نرم نرم بستروں پر اللہ تعالی کا ذکر کرتے ہیں جس کی وجہ سے حق تعالیٰ جنت کے اعلیٰ درجوں میں ان کو پہنچا دیتا ہے ،دنیا میں مشقتیں جھیلنا صعوبتیں برداشت کرنا آخرت میں درجات کی بلندی کاسبب ہے اور جتنی بھی دینی امور میں مشقت اٹھائی جائے گی ،اتنا ہی بلند مرتبوں کا استحقاق ہوگا ۔اگر تم ہر وقت ذکر میں مشغول رہو تو فرشتے تمہارے بستروں پر اور تمہارے راستوں میں تم سے مصافحہ کرنے لگیں گے۔انہوں نے کہاکہ جو اللہ تعالی کا ذکر نہیں کرتا وہ زندہ بھی مردہ ہے ۔اللہ تعالی کے ذکرجنت میں داخل ہونے کا ٹکٹ ہے ایک دن سب نے اس فانی دنیا سے کوچ کرکے قبر میں جانا ہے زندگی میں توبہ کرکے اپنے گناہوں کا کفارہ اداکریں اوراللہ تعالی کی طرف سے نازل ہونے والا عذاب کا راستہ اللہ تعالی کا ذکر ہی روک سکتاہے اس لیے امت مسلمہ کے دین کو اپنا کر دوسروں تک پہنچانا ہی بہتر عمل ہے اور آپ بھی اس کارخیر میں شامل ہوکر آخرت کی زندگی کے لیے محنت کرکے کچھ کمالو تاکہ آپکے پاس کچھ ایسا سامان ہوجو آخرت میں کام آسکے۔

اجتماع

مزید : صفحہ آخر