ڈی جی نیب لاہور نے حقائق کو مسخ کرنے کی کوشش کی، سعد رفیق

ڈی جی نیب لاہور نے حقائق کو مسخ کرنے کی کوشش کی، سعد رفیق

  

اسلام آباد(آئی این پی) مسلم لیگ (ن)کے سینئر رہنما اور سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ ڈی جی نیب لاہور نے غلط بیانی اور حقائق کو مسخ کرنے کی کوشش کی،انہوں نے جمعرات کو ڈی جی نیب کے لاہور کے ایک نجی ٹی وی کو دئے گئے انٹرویو پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ٹوئٹر پیغام میں انہیں مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کس قانون کے تحت میڈیا میں خبریں لگواتے اور انٹرویوز دیتے ہو؟میں نہیں آپ قانون کے ناجائز استعمال میں ملوث ہیں،قابل احتساب لوگ دوسروں کا کیا احتساب کریں گے،کس قانون کے تحت لوگوں کو جھوٹی گواہی دینے پر مجبورکرتے ہو ؟گرفتار افراد پر مسلسل دباؤ ڈالا گیا کہ میرے خلاف کسی بھی طرح گواہی لائی جا سکے۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ نجی ٹی وی پر ڈی جی نیب لاہور کا میرے بارے بیان غلط بیانی اور حقائق کو مسخ کرنے کی کوشش ہے ،ڈیڑھ برس سے مسلسل نیب مجھے میرے خاندان اور دوستوں کو ہراساں کر رہاہے،ان الزامات پر میرے خلاف نیب کی تحقیقات مشرف دور میں بھی ہوئیں اور آخر میں نیب نے اسی دور میں مجھے معذرت کا خط بھیجا جو میں عدالت میں پیش کر چکاہوں۔انہوں نے کہا کہ سیاسی انتقام لینے والے اللہ اور قانون کی گرفت میں ضرور آئیں گے۔سعد رفیق نے کہا کہ مجھے انتخابات میں ہروانے کیلئے نیب لاہور بطور ہتھیار استعمال ہوا،گرفتار افراد پر مسلسل دباؤ ڈالاکہ میرے خلاف کسی بھی طرح گواہی لائی جا سکے۔جمہوریت کے حق میں مسلسل آواز بلند کرنا میرا جرم ہے۔

سعد رفیق

مزید :

صفحہ آخر -