پنجاب میں یکساں نظام تعلیم کیلئے سفارشات کی تیاری شروع

پنجاب میں یکساں نظام تعلیم کیلئے سفارشات کی تیاری شروع

  

لاہور(دیبا مرزا سے)پنجاب ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے صوبہ بھر میں یکساں نظام تعلیم متعارف کروانے کے لیے قائم کردہ 6 اعلیٰ ماہرین تعلیم پر مشتمل کمیٹی نے سفارشات تیار کرنی شروع کر دی ہیں،جو پندرہ نومبر کو صوبائی وزیر تعلیم راجہ ہمایوں سرفراز کو پیش کی جائیں گی۔’’روزنامہ پاکستان‘‘ کو ملنے والی تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے 100روزہ ایکشن پلان میں شامل تعلیمی اصلاحات کے تناظر میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ چاروں صوبوں میں یکساں نظام تعلیم رائج کیا جائے گا اور اس کی ابتدا صوبائی سطح پر ہو گی پنجاب کے مختلف شہروں میں یہ نظام تعلیم تجرباتی طور پر نافذ العمل ہو گا اس مقصد کے لئے 6ماہرین تعلیم پر مشتمل ایک گروپ تشکیل دیا گیا ہے جسے ہدایت کی گئی ہے کہ وہ سب سے پہلے صوبائی تعلیمی پالیسی مرتب کریں جس کے لئے یہ ماہرین تعلیم کا گروپ مختلف اداروں کے سربراہان سے ملاقاتیں کرے گا ،اور ان کے حوالے سے ملنے والی سفارشات کی روشنی میں نئی پالیسی مرتب کی جائے گی،پنجاب ہائر ایجوکیشن کی سیکرٹری سارہ سعید ماہرین تعلیم کی خصوصی کمیٹی کے کوآرڈینیٹر کے طور پر کام کررہی ہیں جن کا کہنا ہے کہ کمیٹی نئی تعلیمی پالیسی کے خدوخال اور ٹی او آرز بھی تیار کرے گی لمز کے ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد احسن رانا کو ماہرین تعلیم کی اس کمیٹی کا فوکل پرسن مقرر کیا گیا ہے جب کہ دوسرے گروپ کے فوکل پرسن کے طور پر لمز کے ہی پروفیسر ڈاکٹر جمشید حسن خان ہوں گے ایک تیسرا گروپ بھی تشکیل دے دیا گیا ہے جو نصاب تعلیم کے معیار اور یکسانیت پر کام کر رہا ہے۔

سفارشات

مزید :

صفحہ اول -