عطاالحق قاسمی کی ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی غیرقانونی قرار

عطاالحق قاسمی کی ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی غیرقانونی قرار

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ نے سابق ایم ڈی پاکستان ٹیلی ویژن کی تقرری کو غیرقانونی قرار د یتے ہوئے حکم دیا ہے 19 کر و ڑ78لاکھ 67ہزار491کا نصف عطاالحق قاسمی جبکہ 20،20فیصد رقم پرویز رشید ، ا سحا ق ڈاراور10فیصد فواد حسن فواد ادا کریں ، اگرایم ڈی پی ٹی وی کا عہدہ خالی ہے تو اس پرمستقل ایم ڈی تعینات کیا جائے،تفصیلات کے مطا بق عطاالحق قاسمی کی بطورایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس کا محفوظ کردہ فیصلہ گزشتہ روز عدالت عظمی کے دو رکنی بینچ نے سنادیا۔48 صفحا ت پر مشتمل فیصلہ چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثا ر نے تحریر کیا۔عدالت عظمی نے اپنے فیصلے میں کہا عطا الحق قاسمی نے 8کروڑ 82 لا کھ 46ہزار360روپے تنخواہ وصول کی ، 15کروڑ 22لاکھ 92ہزار301روپے دیگر اخراجات میں استعمال کیے اس میں گاڑی کے ا خر ا جا ت میں ذاتی گاڑی مرسیڈیزای 200 پرخرچ کی رقم بھی شامل ہے جبکہ 14لاکھ 60ہزار کمرے کے کرایے کی مد میں خرچ کیے گئے ۔ سپر یم کورٹ نے حکم دیا 19 کر و ڑ 78 لاکھ 67ہزا ر 491کا نصف عطاالحق قاسمی جبکہ 20،20 فیصد رقم پرویز رشید ،اسحاق ڈاراور10 فیصد فواد حسن فواد ادا کریں ۔ عد ا لت عظمی نے تفصیلی فیصلے میں عطا الحق قاسمی کے دیے گئے احکامات، تنخواہ اور حاصل مالی فوائد کو غیر قانونی قرار دیا۔

سپریم کورٹ

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)ممتاز صحافی ،کالم نگار اور سابق چیئرمین پی ٹی وی عطا الحق قاسمی نے کہا ہے جس شخص کو پیسے کی ہوس ہو وہ 14 کرو ڑ روپے کی نوکری کو ٹھوکر نہیں مارتا ،میں نے ایک سال پہلے نوکری اَز خود چھوڑ دی تھی کیونکہ انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ ایم ڈی نہیں لگا رہا تھا ،وہ پی ٹی وی پر اپنا ہولڈ رکھنا چاہتا تھا،اپنے خلاف آنیوالا فیصلہ ابھی میں نے تفصیل کیساتھ نہیں پڑھا ،میں سپریم کورٹ کا بڑا احترام کرتا ہوں لیکن مقررہ مدت سے پہلے ہی اس فیصلے کیخلاف اپیل دائر کر دونگا،میں نے کسی کو کوئی نوکری نہیں دی۔نجی ٹی وی چینل ’’دنیا نیوز‘‘ کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے انکامزید کہنا تھامیں نے اس پوسٹ کیلئے اپلائی نہیں کیا تھا بلکہ مجھے لگایا گیا تھا اور اس عہدے پر رہتے ہوئے میں نے پوری دیانتدرای سے اپنے فرائض سرانجام دیئے۔

مزید : صفحہ اول