ایس ایچ او پنڈ دادنخان کے کار خاص نے جان سے مارنے اور فوجداری مقدمات میں ملوث کر کے جیل میں بند کرانے کی دھمکیاں شروع کر دیں

ایس ایچ او پنڈ دادنخان کے کار خاص نے جان سے مارنے اور فوجداری مقدمات میں ملوث ...

  

راولپندی(سٹی رپورٹر) راولپنڈی کے شہری نصیر احمد مغل کو کیس کی پیروی کیلئے پنڈدادنخان جانے پر ایس ایچ او پنڈ دادنخان کے کار خاص نے جان سے مارنے اور فوجداری مقدمات میں ملوث کر کے جیل میں بند کرانے کی دھمکیاں شروع کر دیں،متاثر ہ شہری نصیر احمد مغل نے آر پی او راولپنڈی سے انصاف فراہم کرنے کیلئے اپیل کر دی،تفصیلات کے مطابق راولپنڈی کے شہری نصیر احمد مغل نے آر پی او راولپنڈی کو درخواست دیتے ہوئے کہا کہ میں نے مسماۃ بشریٰ شاہین سے راولپنڈی میں پسند کی شادی کی تھی جس کا اس کے رشتہ داروں کو رنج تھا اور آئے روز جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہے تھے اور کچھ عرصہ قبل مسماۃ بشریٰ شاہین لڑائی جھگڑا کر کے میرے دو بیٹوں شعیب نصیر مغل اور حسن نصیر مغل کو اپنے رشتہ داروں کے ہمراہ زبردستی لیکر اپنے والدین کے گھر چلی گئی والدین کے گھر جانے کے بعد اس نے پنڈ دادنخان میں میرے خلاف فیملی عدالت میں خلع کا دعویٰ دائر کر دیا اور اب جب میں اپنے کیس کی پیروی کیلئے پنڈ دادنخان عدالت میں جاتا ہوں تو مجھے ملک طفیل اور ملک ایوب دھمکیاں دیتے ہیں کہ اگر تو اب دوبارہ پنڈدادنخان کی عدالت میں کیس کی پیروی کیلئے آیا تو تجھے جان سے مار دیں گے اور تیرے خاندان کے دیگر افراد کو منشیات سمیت دیگر سنگین جرائم کے الزامات میں مقدمہ درج کر کے جیل بھیج دیں گے ، نصیر احمد مغل نے کہا کہ آر پی او راولپنڈی کو ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم کو ملک طفیل اور ملک ایوب کے خلاف کاروائی کریں ملک طفیل ایس ایچ او تھانہ پنڈ دادنخان کا بھائی جبکہ ملک ایوب ایس ایچ او کا کار خاص ہے نصیر احمد مغل نے کہا ہے کہ اگر مجھے اور میرے خاندان کے کسی فرد کو کوئی نقصان پہنچا تو اس کے ذمہ دار ملک طفیل اور ملک ایوب ہوں گے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -