جنسی تعلقات کے ذریعے منتقل ہونے والی وہ بیماری جو خزاں کے موسم میں بے حد تیزی سے پھیلتی ہے

جنسی تعلقات کے ذریعے منتقل ہونے والی وہ بیماری جو خزاں کے موسم میں بے حد تیزی ...
جنسی تعلقات کے ذریعے منتقل ہونے والی وہ بیماری جو خزاں کے موسم میں بے حد تیزی سے پھیلتی ہے

  

لندن(نیوز ڈیسک) موسم بدلتا ہے تو طرح طرح کی بیماریں پھیلنے لگتی ہیں، لیکن اگر آپ سمجھتے ہیں کہ یہ معاملہ صرف نزلہ زکام اور گلے کی خرابی جیسی بیماریوں تک ہی محدود ہے تو ایسا نہیں ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ آغاز خزاں میں جب موسم تبدیل ہو رہا ہوتا ہے تو ہر طرح کا انفیکشن عام ہوجاتا ہے۔ اور یہی وجہ ہے کہ نزلہ زکام، کھانسی، گلے کی خرابی اور دیگر ایسی بیماریاں تو اس موسم میں عام پائی جاتی ہیں، ان کے ساتھ ہی جنسی بیماری سوزاک کا خطرہ بھی بڑھ جاتاہے کیونکہ یہ بھی انفیکشن سے پھیلتی ہے۔ 

سائنسی جریدے PLoS Pathogens میں کولمبیا یونیورسٹی کے میل مین سکول آف پبلک ہیلتھ کے سائنسدانوں کی ایک تحقیق شائع ہوئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ موسم کی تبدیلی کے ساتھ انفیکشن سے پھیلنے والی ہر طرح کی بیماریاں عام پائی جاتی ہیں، اور یہ معاملہ صرف عام نزلہ زکام اور گلے کی خرابی تک محدود نہیں ہے۔ انفیکشس ڈیزیز ایکالوجسٹ میکائلہ مارٹنیز اور ان کی ٹیم نے کم و بیش 69 ایسی بیماریوں کی نشاندہی کی ہے جو موسم کی تبدیلیوں کے ساتھ زیادہ پھیلتی ہیں۔ میکائلہ مارٹنیز کا کہنا ہے کہ ان بیماریوں میں جنسی بیماری سوزاک اور جلدی بیماری کوڑھ بھی شامل ہے۔ 

تحقیق میں مزید بتایا گیا ہے کہ سردی کے بعد جب بہار کا موسم آتا ہے، پودوں کی نئی کونپلیں پھوٹنے لگتی ہیں اور پھول کھلنے لگتے ہیں، اور تازہ ہوا چلنا شروع ہوجاتی ہے ،تو متعددی بیماریوں میں بھی قدرتی طور پر کمی آنے لگتی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -تعلیم و صحت -