حفاظتی تدابیر اختیار کر کے سموگ کے اثرات سے بچا جا سکتا ہے،ہارون جہانگیر

  حفاظتی تدابیر اختیار کر کے سموگ کے اثرات سے بچا جا سکتا ہے،ہارون جہانگیر

  



لاہور(جنرل رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹر ڈاکٹر ہارون جہانگیر نے کہا ہے کہ سموگ ماحولیاتی آلودگی کی وجہ سے پیدا ہوتی ہے،حفاظتی تدابیر اپنا کر اس کے اثرات سے بچا جا سکتا ہے۔انھوں نے کہا کہ سموگ کی وجہ سے شہریوں میں آنکھ،سانس اور پھیپھڑوں کی بیماریاں پیدا ہوتی ہیں ماسک اور عینک کا استعمال کرکے اس سے بچا جا سکتا ہے۔ڈاکٹر ہارون جہانگیر نے کہا کہ لوگوں کو چاہیے کہ سموگ کے اوقات میں غیر ضروری طور پر باہر نکلنے سے گریز کریں اور زیادہ سے زیادہ پانی پیئے۔انھوں نے کہا کہ سموگ کی صورت میں لوگوں کو چہرہ، آنکھیں اور ہاتھ بار بار دھونے چاہیے اور آنکھوں کو مسلنے سے پرہیز کرنا چاہیے۔سانس کی پرابلم اور آنکھین سرخ ہونے پر قریبی داکٹر یا سرکاری ہسپتال سے رجوع کرنا چاہیے۔

ڈی جی ہیلتھ نے مزید کہا کہ پنجاب کے تمام اضلاع میں سموگ کے اثرات سے بچاؤ کے لیے خفاظتی تدابیر اپنانے کے لیے آگہی مہم چلائی جا رہی ہے اور اس مقصد کے لیے تمام فیلڈ افسران کو سموگ ایڈواٰئزری جاری کر دی گئی ہے۔انھوں نے کہا کہ سموگ سے بچاؤ کے لیے شہریوں کو حکومت سے تعاون کرنا ہوگا تاہم پنجاب حکومت ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کے لیء ہر ممکن اقدام اٹھا رہی ہیں۔آگہی مہم کا انعقاد محکمہ صحت اور ٹریفک پولیس کے اشتراک سے کیا گیا۔ ڈی جی ہیلتھ ڈاکٹر ہارون جہانگیر نے اس سلسلہ میں لبرٹی چوک پر شہریوں میں سموگ سے بچاؤ کے لیے آگہی لٹریچر اور ماسک تقسیم کیے۔اس موقع پر ٹریفک پولیس کے اہلکاروں نے لوگوں میں آگہی لٹریچر اور ماسک بھی تقسیم کیے۔آگہی مہم میں ایڈیشنل ڈائریکٹر ہیلتھ ڈاکٹر محمد یونس،ڈائریکٹر اکاونٹس غلام محمدڈپٹی پروگرام مینیجر سی ڈی سی ڈاکٹر شعبان،ڈاکڑ عقیل،ہیلتھ ایجوکیشن آفیسر عثمان غنی اور دیگر افسران نے شرکت کی۔ڈی ایس پی ٹریفک پولیس منیر احمد،انچارج ٹریفک ایجوکیشن برانچ میڈم نادیہ اور ٹریفک پولیس کے اہلکاروں نے بھی مہم میں بھرپور حصہ لیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...