معاشی کارکردگی تسلی بخش، آئی ایم ایف کا دوسری قسط جاری کرنے کا اعلان 

معاشی کارکردگی تسلی بخش، آئی ایم ایف کا دوسری قسط جاری کرنے کا اعلان 

  



اسلام آباد(آئی این پی ) بین الاقوامی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف)نے پاکستان کو 45 کروڑ ڈالر کی دوسری قسط جاری کرنے کا اعلان کردیا ، پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان سہ ماہی جائزہ مذاکرات ہوئے، مشکل حالات کے باوجود پاکستان نے پروگرام پر بہتر عمل درآمد کیا، اندرونی اور بیرونی خسارے کم ہورہے ہیں،پاکستان نے ستمبرکیلئے طے کردہ معاشی اہداف حاصل کرلیا ہے، معاشی اصلاحاتی عمل کے ثمرات نظر آنا شروع ہوگئے، آئندہ سال سے مہنگائی کی شرح کم ہونے کا امکان ہے۔ آئی ایم ایف اور وزارت خزانہ کی جانب سے گزشتہ روز علیحدہ علیحدہ اعلا مئے جاری کئے گئے ۔ وزارت خزانہ کے جاری اعلامیہ کے مطابق آئی ایم ایف وفد کے مذاکرات ختم ہوگئے جس کے اختتام پر مشن نے وزیراعظم عمران خان کے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ سے ملاقات کی،آئی ایم ایف مشن نے 28اکتوبر سے 8نومبر تک پاکستان کا دورہ کیا، اس دوران انہوں نے وزیراعظم عمران خان کی اقتصادی ٹیم اور صوبائی حکومتوں سے بھی ملاقاتیں کیں۔وزارت خزانہ کے مطابق مشن کے سربراہ نے مشکل حالات میں اہداف پورے کرنے کے لیے پاکستان کی کوششوں کی تعریف کی، آئی ایم ایف پاکستان کی معیشت کا اگلا جائزہ آئندہ برس سے شروع کرے گا۔مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ سے ملاقات میں آئی ایم ایف کے وفد کی قیادت ارنسٹو امریزریگو نے کی۔ مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے مالیاتی ادارے کی تکنیکی، مشاورتی اور مالی مدد کی تعریف کی۔ بعد ازاں آئی ایم ایف نے دورے کے اختتام پر اعلامیہ جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مشکل حالات کے باوجود پاکستان نے پروگرام پر بہتر عمل درآمد کیا، اندرونی اور بیرونی خسارے کم ہورہے ہیں۔ اعلامیہ کے مطابق پاکستان نے منی لانڈرنگ کیخلاف اقدامات بہتر کیے، معاشی ترقی کی شرح کم ہے لیکن مثبت ہے پاکستان نے توانائی اصلاحات میں بہتری کی ہے، مالیاتی اورکرنٹ اکانٹ خسارے میں کمی ہورہی ہے، سٹیٹ بینک کے زرمبادلہ کے ذخائر بہتر ہوئے ہیں ،پاکستان میں ترقی بجٹ کی ترجیحات متعین کی گئی ہیں۔ اعلامیہ مےں مزید کہا گیا کہ پاکستان کیلئے اندرونی و بیرونی معاشی چیلنجز تاحال درپیش ہیں، جائزہ اجلاس میں معاشی کارکردگی سے مطمئن ہیں، پاکستان کی معاشی کارکردگی سے بورڈ کوآگاہ کیا جائے گا، بورڈ کارکردگی کی بنیاد پر 45کروڑ ڈالر کی قسط منظور کرے گا، ، آنے والے دنوں میں مہنگائی میں کمی کا امکان ہے ،ایف اے ٹی ایف سفارشات پر عمل درآمد کے لیے مارچ 2020 تک عمل درآمد بھی کیا جارہا ہے۔علاوہ ازیںآئی ایم ایف، ورلڈ بینک اور ایشین ڈویلپمنٹ بینک کے اعلی سطحی وفد نے پاور ڈویژن کی طرف سے مربوط گردشی قرضوں کو کنٹرول کرنے کے پلان ہر اطمینان کا اظہار کردیا ۔ عالمی مالیاتی اداروں کے وفد نے گزشتہ روز وفاقی وزیر پاور ڈویژن عمر ایوب خان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں گردشی قرضوں سے متعلق گفتگو ہوئی۔ پاور ڈویژن کے حکام نے اس پلان سے متعلق وفد کو بریف کیا ۔ملاقات میں وفاقی سیکرٹری پاور عرفان علی اور دیگر اعلی حکام بھی موجود تھے۔وفد کو پاور ڈویژن کی طرف سے لیے گئے دیگر تکنیکی اور انتظامی اقدامات سے بھی آگاہ کیا گیا ۔ وفاقی وزیر عمر ایوب خان نے گردشی قرضے کو روکنے کے پلان کی منظوری پر وفد کا شکریہ ادا کیا۔

آئی ایم ایف/اعلان

مزید : صفحہ اول


loading...