اقتصاد ی رابطہ کمیٹی ، نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی کی نجکاری کا عمل تیز کرنے کی ہدایت

      اقتصاد ی رابطہ کمیٹی ، نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی کی نجکاری کا عمل ...

  



اسلام آباد (این این آئی) مشیر خزانہ کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ کیاگیا ہے کہ نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی کے زیر انتظام گیس سے چلنے والے بجلی کے کارخانوں میں قطر سے درآمد شدہ گیس کے استعمال کی مقدار میں کسی قسم کی کمی بیشی کمپنی کی نجکاری کے عمل پر اثر اندز نہیں ہو گی ۔ جمعہ کو مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیر صدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں ای سی سی کی جانب سے نجکاری کمیشن کو نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی کی نجکاری کے عمل کو تیز تر بنیادوں پر پایہ تکمیل تک پہنچانے کی ہدایت کی گئی ۔اجلاس کے دوران نیشنل پاور پارکس مینجمنٹ کمپنی کے زیر انتظام گیس سے چلنے والے بجلی کے کارخانوں میں قطر سے درآمد شدہ گیس کی متعین شدہ مقدار کو مکمل یا جزوی طور پر استعمال کرنے اور قطر سے 2025 تک ملنے والی اضافی گیس کو معیشت کے دیگر شعبوں میں استعمال کرنے کے لیے مختلف تجاویز اور آپشنوں پر غور کیا گیا۔اجلاس میں طویل بحث و مشاورت کے بعد طے کیا گیا کہ قطر سے درآمد شدہ گیس کو بجلی کے کارخانوں کے علاوہ معیشت کے دیگر شعبوں میں استعمال کرنے کے حوالے سے ای سی سی کے اگلے اجلاس میں تفصیلی غور و خوض کیا جائے گا اور اس حوالے سے پٹرولیم ڈویڑن کو تمام سٹیک ہولڈرز اور وزارتوں کے ساتھ باہمی اشتراک کے ساتھ جامع تجاویز تیار کرنے اور انہیں اگلے اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت کی گئی۔

مشیر خزانہ

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان میں جرمنی کے سفیر برن ہارڈ سٹیفن شلاگ ہیک نے وزیر اعظم کے مشیر خزانہ و محصولات ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ سے ملاقات کی جس میں پاکستان اور جرمنی میں باہمی تعلقات کو مزید وسعت دینے اور بالخصوص پاکستان میں جرمن سرمایہ کاروں کی سرمایہ کاری اور کاروباری شراکتیں قائم کرنے کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔مشیر خزانہ و محصولات ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ نے جرمن سفیر کو مالی و تجارتی خساروں پر قابو پانے، محصولات میں خاطر خواہ اضافہ لانے ،سماجی تحفظ کے شعبے کے لیے بجٹ کو دوگنا کرنے اور شرح مبادلہ کو استحکام دینے کے علاوہ معیشت کے دیگر شعبوں میں ہونے والی اقتصادی اور ادارہ جاتی اصلاحات کے لیے حکومت کی کوششوں اور ان کے مثبت ثمرات سے آگاہ کیا۔

جرمن سفیر کی ملاقات 

مزید : صفحہ اول


loading...