تبلیغی جماعت کا مقصد پوری دنیا میں اسلام کی دعوت پہنچانا ہے ، عالمی اجتماع میں مقررین کا خطاب

  تبلیغی جماعت کا مقصد پوری دنیا میں اسلام کی دعوت پہنچانا ہے ، عالمی اجتماع ...

  



رائے ونڈ (نمائندہ پاکستان)مقررےن نے کہاہے کہ دےنی دعوت کی فکر اور تڑپ کو ہر کلمہ گو مسلمان کے دل مےں پےدا کرنا،احےائے اسلام کےلئے زندگی کا گزارانا ،اکرام مسلم کی ترغےبات کو عام کرنا ہماری سوچوں کا محور ہونا چاہےے ،امت کی نجات امر بالمعروف ونہی عن المنکر مےں مضمر ہے بھلائی کی دعوت دےنا اور برائی سے روکنا،بھلائی اور خےر کے معاملے کو عام کرنے کے لئے ہرامتی داعی بن جائے تبلےغی جماعت کا مقصد پوری دنےا مےں اسلام کی دعوت پہنچانا ہے اس اہم کام کے فرےضہ کی ادائےگی کے لئے ہر امتی کو گھروں سے نکالنا اس کام کی اہمےت پر محنت کرنا ہے دعوت و تبلےغ کی عالم گےر تحرےک آقائے نامدارر کے بتائے ہوئے اصولوں پر کام کررہی ہے جنہےں اللہ تعالیٰ نے خاتم الانبےاءبنا کر بھےجا نبوت کا دروازہ مقفل ہونے کے بعد اس کام کی ذمہ داری صحابہ اکرامؓ ؓنے احسن انداز مےں نبھائی اسلام محبت ،اخوت اور امن کا دےن ہے اسلامی معاشرے کی بنےاد سرور کائنات نے مدےنہ طےبہ مےں رکھی مہاجرےن اور انصارکو آپس مےں بھائی بھائی بنا دےا ۔عالمی اجتماع کی مختلف نشستوں سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عبدالرحمان،مولانا محمد اسماعےل،مولانا محمد فاروق بنگلہ دےش،مولانا احمد لاٹ ودےگرنے کہاکہ آنحضور نے مہاجرےن اور انصار پر جو معاشرہ تشکےل دےا سادگی اور حےاءوالامعاشرہ ، آج اس معاشرے کو قائم کرنے کی ضرورت ہے جس قوم کی معاشرت ختم ہوجائے وہ قوم تباہ ہوجاتی ہے فضول خرچی ،اسراف اور بے حےائی کی وجہ سے امت تباہی کے دہانے پر پہنچ چکی ہے ہر جگہ کی معاشرت نبی پاک کے معاشرے مطابق ہوجائے سادگی اور حےاءنبوت والے معاشرے کی نشانےاں ہےں نبی پاک نے ہرامتی کو سادگی کا حکم دےا اسراف اور فضول خرچی سے منع کےا حدےثوں مےں آےا ہے کہ فضول خرچ شےطان کا دوست ہوتا ہے اےمان پر محنت کرنا ہوگی اکےلی ذات رب کائنات کی جس سے سب کچھ ہونے کا ےقےن، دنےا سے کچھ نہ ہونے کا ےقےن جب ہمارے دلوں مےں آجائے گا تب اللہ کی رحمتوں اور برکتوں کا نزول شروع ہو جائے گا مخلوق کا خالق سے تعلق مضبوط کرنا ہوگا نبی پاک کی محنت کو اپنانا ہوگا ہم دعوت وتبلےغ کے کام کو بولےں گے،سوچےں گے ،سنےں گے اور رو رو کر اپنے ناراض رب سے گناہوں کی معافی مانگےں گے ہرامتی نے اس کام کو کرتے کرتے مرنا ہے مرتے مرتے کرنا ہے نفسا نفسی کے اس دور مےں ہر شخص اےک اےسی گھٹن مےں مبتلا ہے جس کا واحد علاج دعوت الی اللہ ہے اللہ کے ساتھ اس کے بندے کا تعلق جوڑنا ہی تبلےغ کا بنےادی مقصد ہے آج پوری بشرےت اللہ کا تعارف چاہتی ہے ہر طرف ےہی چےخ وپکار ہے کچھ اولاد کے لئے پرےشان ہےں کچھ اولاد سے پرےشان ہےں ،کچھ دولت کے لئے پرےشان ہےں کچھ دولت سے پرےشان ہےں الغرض ہر انسان پرےشانی اور مصبےتوں مےں جھکڑا ہوا ہے اپنی گھروں ،محلوں ،ملکوں کو ان گھٹنوں سے نجات دلانے کے لئے ہر امتی اپنا جان مال وقت دعوت مےں لگائے مقررےن نے مزےد کہا کہ جب اللہ کسی کے ساتھ بھلائی کا ارادہ کرتاہے تو اسکو آزمائش کی بھٹےوں سے گزارتا ہے جو اس آزمائش کی گھڑی مےں ثابت قدم رہتے ہےں اللہ ان پر اپنی نوازشات کی بارش کردےتا ہے ۔ نماز جمعہ مےں شرکاءکی تعداد چارلاکھ سے تجاوزکرگئی۔

تبلیغی اجتماع

مزید : صفحہ اول


loading...