صارفین کو 206ارب کی سبسڈی دی، حکومت کا صنعتوں کو کم نرخوں میں اضافی اور 24 گھنٹے بجلی فراہم کرنے کا اعلان 

        صارفین کو 206ارب کی سبسڈی دی، حکومت کا صنعتوں کو کم نرخوں میں اضافی اور ...

  



اسلام آباد (آئی این پی،آن لائن) وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ ملک میں معیشت کا پہیہ چلانے کیلئے صنعتوں کو کم نرخوں میں اضافی اور 24گھنٹے بجلی فراہم کرنے کا پیکج لا رہے ہیں،جس سے 31.19فیصد گھریلو، کمرشل اور صنعفی صارفین مستفید ہوسکیں گے، صنعتی صارفین سے اضافی بجلی کے 11.97روپے فی یونٹ چارج کئے جایں گے۔ جمعہ کو پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہاکہ ملک بھر میں بجلی صارفین کیلئے بجٹ میں 226ارب روپے کی سبسڈی دی ہے جبکہ 300یونٹ سے کم کے زرعی صارفین کو خصوصی سبسڈی بھی دی گئی ہے۔ انہوں نیکہا کہ صنعتی و دیگر صارفین کو بھی بجلی کے نرخوں میں رعایت دینے کیلئے اقدامات بھی زیر غور ہیں اور گھریلو و کمرشل صارفین کیلئے رعایتی نرخوں کا پیکج بھی لا رہے ہیں جبکہ رعایتی نرخ اضافی یونٹ استعمال کرنے والوں پر بھی لاگو ہوں گے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ رعایتی بجلی 11.97روپے فی یونٹ چارج کیجائے گی، بجلی کے رعایتی نرخوں سے 31.19فیصد صارفین مستفید ہوں گے جبکہ 2025تک ہمارا ہدف ہے کہ 8ہزار میگاواٹ بجلی قابل تجدید ذرائع سے نظام میں لائیں۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی صارفین کیلئے بجلی کی قیمتوں  میں کمی سے انہیں فائدہ ہو گا اور وہ بھی بین الاقوامی سطح کی مارکیٹ میں آ جائیں گے اور صنعت کا پہیہ چلنا شروع ہو جائے گا،بجلی کی فراہمی اور نرخوں کی کمی سے صنعتوں میں پروڈکشن بڑھے گی اور وہ زیادہ پروڈکشن بنا سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ صنعتی شعبے کو مزید 1800سے 2000تک میگاواٹ بجلی فراہم کرنا ہمارا ٹارگٹ ہے۔ عمر ایوب نے کہا کہ دو دن پہلے متبادل توانائی بورڈ نے 550میگاواٹ بجلی کے 11منصوبوں کی منظوری دی ہے جس کی فی یونٹ قیمت ساڑھے6روپے ہے جبکہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایات ہیں کہ جلد سے جلد متبادل ذرائع سے بجلی نظام میں لائیں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومتوں نے بجلی کو مہنگے ذرائع سے پیدا کر کے ملک میں بوجھ ڈالا تھا ہم اس کو بھی کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

 عمر ایوب

مزید : صفحہ آخر


loading...