مبینہ ناقص فرنیچر کی فراہمی، مقدمہ درج نہ کرنے پر ایس پی کمپلینٹ سیل سے جواب طلب

مبینہ ناقص فرنیچر کی فراہمی، مقدمہ درج نہ کرنے پر ایس پی کمپلینٹ سیل سے جواب ...

  



ملتان (وقائع نگار) ایڈیشنل سیشن جج ملتان نے نجی فرم کی جانب سے چلڈرن ہسپتال میں مبینہ ناقص فرنیچر فراہم کرنے اور سیکورٹی رقم ملی بھگت سے ہتھیانے والوں کے خلاف مقدمہ درج نہ کرنے کی درخواست پر ایس پی کمپلینٹ سیل سے (بقیہ نمبر30صفحہ12پر)

21 نومبر کو جواب طلب کرلیا ہے۔ فاضل عدالت میں چلڈرن ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر مظہر الخالق نے فرنیچر کمپنی کے پروپرائیٹر سمیت دو افراد کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ فرنیچر فرم پروپرائیٹر نجی ٹریڈرز کے پروپرائیٹر منور حسین کو چلڈرن ہسپتال میں فرنیچر کی سپلائی کا آرڈر دیا گیا تھا جس پر فرنیچر فرم کی جانب سے 2 لاکھ 30 ہزار روپے کی سی ڈی آر بطور وارنٹی ہسپتال میں رکھی گئی ہسپتال کو ناقص فرنیچر سپلائی کرنے پر سیکورٹی سی ڈی آر بحق سرکار ضبط کرلی گئی جس کے بعد ہسپتال کی پرچیز برانچ سے فرنیچر فرم نے نا معلوم افراد کی مدد سے سی ڈی آر چوری کی اور بینک عملہ سے ملی بھگت کر کے 2 لاکھ 30 ہزار روپے کی سی ڈی آر کیش کرالی تھی جس پر پولیس تھانہ چہلیک میں فرنیچر فرم مالک سمیت دو ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی گئی لیکن اس کے باوجود مقدمہ درج نہیں کیا جا رہا ہے۔ فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ پولیس کو ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے۔

جواب طلب

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...