کاہنہ ، جائیداد کے تنازع پر ہیڈ کانسٹیبل نے بڑے بھائی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا

کاہنہ ، جائیداد کے تنازع پر ہیڈ کانسٹیبل نے بڑے بھائی کو فائرنگ کرکے قتل ...

 لاہور(اپنے کرا ئم ر پو رٹر سے)کا ہنہ میں جائیداد کے تنازع پر حساس ادارے کے ملاز م چھوٹے بھائی نے فائرنگ کر کے 45 سالہ بڑے بھائی کو موت کے گھاٹ اتار دیا، ملزم جائے وقوعہ سے فرار ہو گیا۔پو لیس نے لا ش پو سٹما ر ٹم کیلئے بجھو ا کر تفتیش شر وع کر دی ۔ بتایا گیا ہے کہ کاہنہ کے علاقے نصیب آباد میں ریحا ن گارڈن کے رہائشی مستنصر علی نے پراپرٹی ڈیلر کی دکان بنا رکھی تھی ۔ پولیس کاکہنا ہے کہ مستنصر علی اور اس کے چھوٹے بھائی مقصود علی جو ایک حساس ادارے میں بطور ہیڈ کانسٹیبل نوکری کرتا ہے کے درمیان ایک پلاٹ کا تنازع کافی عرصہ سے چل رہا تھا جس پر دونوں بھائیوں کی آپس میں متعدد بار لڑائی جھگڑا ہو چکا ہے ۔ گزشتہ روز مقصود علی اپنے بھائی کی دکان پر آیا اور مستنصر علی کو دکان کے باہر کھڑا دیکھ کر اس پر فائرنگ کر دی اور موقعے سے فرار ہو گیا ۔ مستنصر علی کو تین گولیاں لگیں اور وہ موقع پر ہی دم توڑ گیا ۔اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش قبضہ میں لیکر پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانے میں جمع کروا دی ہے۔ ملزم فائرنگ کرتا ہوا موقع سے فرار ہو گیا۔ مقتول مستنصر علی تین بچوں کا باپ تھا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اندارج مقدمہ کے لئے درخواست موصول نہیں ہوئی درخواست موصول ہونے پر مقدمہ درج کرلیا جائے گا۔

مزید : علاقائی