ہائیکورٹ نے لاہور بار کے نائب صدر رانا سعید کی وکالت کا لائسنس معطل کردیا

ہائیکورٹ نے لاہور بار کے نائب صدر رانا سعید کی وکالت کا لائسنس معطل کردیا
ہائیکورٹ نے لاہور بار کے نائب صدر رانا سعید کی وکالت کا لائسنس معطل کردیا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی) چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ کی سربراہی میں قائم 7رکنی سپروائزی کمیٹی نے ججوں سے غیر اخلاقی رویہ اختیار کرنے کے الزام میں لاہور بار ایسوسی ایشن کے نائب صدر رانا سعید کی وکالت کا لائسنس معطل کردیا۔لیگل پریکٹیشنرز اور بارکونسلز ایکٹ1973 کے تحت قائم سپروائزی کمیٹی کے اجلاس میں جسٹس سید محمد کاظم رضا شمسی، جسٹس ملک شہزاد احمد خان، جسٹس عبد السمیع خان، جسٹس عباد الرحمان لودھی، جسٹس عاطر محمود اور جسٹس مسعود جہانگیر نے شرکت کی۔ اجلا س میں ججزسے بدتمیزی کرنے اور عدالتوں میں غیر اخلاقی رویے کے حامل دو وکلاء رانا سعید انور ایڈووکیٹ اور آصف بشیر مرزا ایڈووکیٹ کو ذاتی شنوائی کیلئے طلب کیا گیا تھا۔ کمیٹی نے وکلاء عدالتوں میں غیر اخلاقی رویے کی بناء پر ان کے خلاف لیگل پریکٹیشنرز اور بارکونسلز ایکٹ1973 کی شق54(2) کے تحت کارروائی کا آغاذ کرتے ہوئے مذکورہ وکلاء کو شوکاز نوٹس جاری کر رکھے ہیں۔ شوکاز نوٹس کے جواب میں رانا سعید انور ایڈووکیٹ سپروائزری کمیٹی کے روبرو پیش نہ ہوئے، جس پر فاضل کمیٹی نے یک طرفہ کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ وکیل کا وکالت کا لائسنس تین ماہ کیلئے معطل کرنے کا حکم دے دیا اور شکایت کا ریکارڈ مزید کارروائی کیلئے پنجاب بار کونسل کو بھجوانے کا حکم دے دیا۔ تاہم ایڈووکیٹ آصف بشیر مرزا نے طبیعت کی خرابی کے پیش نظر کمیٹی کے روبرو پیش ہونے سے معذرت کی جس پر فاضل سپروائزری کمیٹی نے انکے خلاف معاملے کی مزید کارروائی 14اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے قرار دیا کہ اس معاملے کو مزید ملتوی نہیں کیا جائے گا۔ واضح رہے کہ ایڈووکیٹ رانا سعید انور کے خلاف ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج لاہور ندیم انجم کی جانب سے شکایت موصول ہوئی تھی کہ انہوں نے عدالت کے نائب قاصد رضوان منشاء سے جوڈیشل فائل چھینی اور بعد ازاں عدالت میں مذکورہ ایڈیشنل سیشن جج کے ساتھ بدتمیزی کی اور انہیں دھمکیاں دیں۔ مذکورہ وکیل نے ایڈیشنل سیشن جج کے بارے میں نازیبا الفاظ کا استعمال بھی کیا، اسی اثناء میں وکیل رانا سعید انور کا جونیئر ساری جوڈیشل فائلیں لے کر بھاگ گیا۔ پولیس نے جونیئر وکیل کو روکنے کی کوشش کی تو وکیل رانا سعید انور نے پولیس اہلکاروں پر حملہ کیااور عدالتی سیکیورٹی پر تعینات پولیس اہلکاروں کے خلاف بھی نازیبا الفاظ استعمال کئے۔

لائسنس معطل

مزید : صفحہ آخر