بلاول کانوازشریف کو انکل اور محب وطن کہنا حیران کن ہے ‘ جمشید دستی

بلاول کانوازشریف کو انکل اور محب وطن کہنا حیران کن ہے ‘ جمشید دستی

مظفرگڑھ( نامہ نگار ) زرداری بلاول اینڈ کمپنی ملک میں یہود نصاریٰ کا نظام لانا چاہتے ہیں249 پیپلز پارٹی اب زرداری پاٹی ہے.نواز شریف کو انکل کہنے والے کی شہید والدہ کو اسمبلی میں مشاہداللہ نے غدار کہا249 نواز زرداری ایکدوسرے کی اربوں کی کرپشن چھپانے میں مصروف ہیں249عمران خان کو چند آستین کے سانپ غلط مشورے دیتے ہیں ان خیالات کا اظہار پاکستان عوامی راج پارٹی کے (بقیہ نمبر3صفحہ10پر )

چیئرمین جمشید احمد دستی نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کے بعد مظفرگڑھ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بلاول زرداری نے نواز شریف کو انکل اور محبِ وطن کہ کر حیران کر دیا ہے کیونکہ میں عینی شاہد ہوں کہ اجلاس میں ن لیگ کے سینیٹر مشاہد اللہ نے محترمہ بے نظیر بھٹو شہید کو سکھوں کی لسٹیں راجیو گاندھی کے حوالے سے غدار کہا مگر زرداری اور بلاول نے شہید ذولفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو کے قاتلوں سے ہاتھ ملا لیا ہے جس سے بھٹوازم ختم ہوگئی ہے انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور زرداری مافیاء گٹھ جوڑ لوٹی ہوئی قومی دولت پچانے کے لیئے ہے یہ لوگ کبھی ایکدوسرے کے احتساب کی کوشش نہی کرینگے انہوں نے کہا کہ فضل الرحمن نے زرداری اور نواز شریف سے اربوں روپے لیئے اور اب حکومت اور زرداری مافیاء کے درمیان سودے بازی کروا رہے ہیں جبکہ کشمیر میں سینکڑوں نہتے مسلمانوں کو بھارت شہید کر چکا ہے بھارتی مظالم پر کشمیر کمیٹی کا کردار شرمناک ہے مساجد پر حملے ہو رہے ہیں علماء کرام جیولوں میں ہیں مگر مولانہ فضل الرحمن دین کی خدمت کی بجائے حکومت بچانے کی بھاگ دوڑ کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ عمران خان کی کوئی سوچ نہی ہے جب انہیں معلوم تھا کہ زرداری بلاول اینڈ کمپنی کرپشن میں لتھڑی ہوئی ہے تو پھر بلاول کے ساتھ ایک کنٹینر پر ساتھ کھڑا ہونے کا دعوء کیوں کیا گیا انہوں نے کہا کہ عمران خان کی آستین کے چند سانپ انہیں غلط مشورے دے کر خراب کر رہے ہیں. انہوں نے کہا کہ پانامہ پیپرز ن لیگ کے ماتھے پر سیاہ داغ ہے پی پی پی اور ن لیگ کا منشور مزدور کسان کی تباہی ہے ان شاء اللہ محرم الحرام کے بعد حکومت کے خلاف جنوبی پنجاب میں تحریک چلائینگے اور اس کے لیئے کے پی کے کے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان249بہاولپور؛ڈیرہ اور ملتان ڈویثرن بند کرینگے۔

جمشید دستی

مزید : ملتان صفحہ آخر