پاکستان علماء دیوبند کی قربانیوں سے معرض وجود میں آیا ،حافظ احمد اللہ

پاکستان علماء دیوبند کی قربانیوں سے معرض وجود میں آیا ،حافظ احمد اللہ

رستم( نمائندہ پاکستان)جمیعت علماء اسلام (ف) کے سنیٹر حافظ حمداللہ نے کہا ہے کہ پاکستان کا وجود علماد بند کی قربانیوں کی مرہون منت ہے مگر نصاب تعلیم میں شیخ الھند کا نام تک نہیں ہے ،بد قسمتی سے ہندوستان میں مسلمان اور پاکستان میں اسلام مظلوم ہے مدرسوں کو دہشتگردی ، انتہا پسندی اور شدت پسندی کا نرسری قرار دینے والے اپنے بیرونی آقاؤں کو خوش کرنے کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چارگلی میں مفتی محمود کانفرس کے پروقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مولانا عبد الطیف اور مولانا صدیق نے بھی خطاب کیا ، سنیٹر حافظ حمداللہ نے کہا کہ اسلام کے نام پر معرض وجود میں آنے والے ملک میں 70سال گزرنے کے باوجود اسلامی قوانین کا نفاذ نہیں ہو ا ملک کی سیاست ، معیشت پر یہودی ایجنٹوں کے بچے اور حوارین قابض ہے ۔ موجودہ جمہوری نظام میں جمہوریت کی حکمرانی نہیں بلکہ اقلیتی حکمران اکثریت پر قابض ہے بدقسمتی سے اسلامی سیاست کی بات کرنے والوں کوبنیاد پرست قرار دیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ علماء اور مدرسوں نے ہر دور میں نوجوانوں کو اغیار کی سوچ و فکر قرآن و اسلام کے منافی قوانین کا ہمیشہ ثابت قدمی سے مقابلہ کیا ہے ۔ جمیعت علماء اسلام پاکستان کے آئین و قانون کے اندر رہ کر اسلامی انقلاب کے لئے جدوجہد جاری رکھے گی ۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر