بھارتی پنجاب میں سرحد پررہنے والے سکھوں پر عرصہ حیات تنگ‘ فوج پیچھے پڑ گئی

بھارتی پنجاب میں سرحد پررہنے والے سکھوں پر عرصہ حیات تنگ‘ فوج پیچھے پڑ گئی
بھارتی پنجاب میں سرحد پررہنے والے سکھوں پر عرصہ حیات تنگ‘ فوج پیچھے پڑ گئی

  


نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت میں سکھوں پر زمین 1984ءکے بعد تنگ چلی آرہی ہے۔ سرحد پر رہنے والے سکھ غلاموں کی طرح زندگی گزارنے پر غور ہیں۔ جنگ کا بہانہ بناکر بھارتی فوج نے انہیں سرحدی علاقوں سے نکال کر ریلیف کیمپوں میں لا پھینکا جہاں یہ بے یارومددگار پڑے ہیں۔ ہرجیت سنگھ چاولہ، ملکیت سنگھ اور دیگر نے بتایا کہ انکی فصلیں تباہ ہو رہی ہیں۔ کسانوں کو نقصان ہو رہا ہے، ہمیں جنگ نہیں امن چاہئے۔ ایسا لگتا ہے کہ ہم ابھی تک ہم بھارتی سرکار کے غلام ہیں۔ بھارتی فوج ہمیں اپنا دشمن سمجھتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ بھارتی فوجیوں نے ہمارے کھیتوں میں بارودی سرنگیں لگا دی گئی ہیں جنہیں صاف نہیں کیا گیا‘ فصلوں اور املاک کے نقصان کا معاوضہ بھی نہیں دیا جا رہا۔

مزید : بین الاقوامی