ایف بی آر تاجر برادری کے مطالبات پر سنجیدگی کا مظاہرہ کرے راولپنڈی چیمبر

ایف بی آر تاجر برادری کے مطالبات پر سنجیدگی کا مظاہرہ کرے راولپنڈی چیمبر

 راولپنڈی (کامرس ڈیسک)راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر صبور ملک نے کہا ہے کہ تاجربرادری کے مطالبات کو فوری تسلیم کیا جائے، مسائل کے حل کے لیے ایف بی آر سنجیدگی کا مظاہرہ کرے۔ محصولات کے غیر معمولی اہداف پر نظر ثانی کی جائے۔ شناختی کارڈ کی شرط کے حوالے سے متعلقہ سٹیک ہولڈرز کے ساتھ نتیجہ خیز ملاقات کی جائے۔ کاروبار پہلے ہی ٹھپ ہیں، صنعتی سرگرمیاں بھی گراوٹ کا شکار ہیں۔ملکی معیشت کو جمود سے نکالنے کے لیے فوری اور ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے۔ حکومت لچک کا مظاہر ہ کرے۔ چیمبر میں تاجروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے صدر صبور ملک نے کہا کہ حالیہ بجٹ میں لیے گئے اقدامات سے معاشی ترقی کے اہداف کا حصول مزید مشکل ہو گیا ہے۔ جب تک کاروباری سرگرمیاں تیز نہیں ہوتیں محصولات کے اہداف کا حصول ناممکن ہے۔ ایف بی آر، وزارت خزانہ و کامرس معاملات کی نزاکت کا احساس کریں۔ انہوں نے کہا کہ پٹرولیم اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے سے پیداواری لاگت میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے۔ برآمدی اہداف متاثر ہوئے ہیں۔ افراط زر کو کنٹرول کرنے، قرضوں کے بوجھ، برآمدی اہداف، محصولات کا حصول اور بے روزگاری جیسے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل بیٹھنا ہو گا۔انہوں نے کہا کہ کاروباری برادری کو درپیش مسائل خاص طور پر ٹیکسوں کا بوجھ اورایف بی آر کی کڑی شرائط کا فوری حل ناگزیر ہے۔ حکومت کاروباری سرگرمیوں کے فروغ کے لیے سازگار ماحول فراہم کرے صدر چیمبر صبور ملک نے کہا کہ ہمیں قوی امید ہے کہ تاجربرادری اور حکومت کے درمیان مشاورت کا عمل آگے بڑھے گا اور ڈیڈ لاک کی صورتحال سامنے نہیں آئے گی۔مشاورت کا عمل آگے بڑھانے اور نتیجہ خیز بنانے کے لیے چیمبر کا پلیٹ فارم حاضر ہے۔چیمبر نے ہمشیہ تاجر برادری کی حقوق کے تحفظ کی بات کی گئی ہے راولپنڈی چیمبر حکومت اور تاجربرادری کے درمیان ایک سہولت کار کا کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔ غیر رسمی معیشت ایک بڑا چیلنج ہے۔ تاجر برادری معیشت کو دستاویزی شکل دینے کے خلاف نہیں ہے۔

مزید : کامرس /رائے


loading...