وزیر اعظم عمران خان کے دورے کے موقع پر چینی فوج کی جانب سے کیا خاص بات کی گئی ؟سابق وزیر خارجہ نے بتادیا

وزیر اعظم عمران خان کے دورے کے موقع پر چینی فوج کی جانب سے کیا خاص بات کی گئی ...
وزیر اعظم عمران خان کے دورے کے موقع پر چینی فوج کی جانب سے کیا خاص بات کی گئی ؟سابق وزیر خارجہ نے بتادیا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیر خارجہ خورشید قصوری نے کہاہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورے کی خاص بات یہ ہے کہ چینی فوج کی جانب سے بھی بیان جاری کیا گیاہے ، چینی فوج نے کشمیر کے معاملہ کو اصولی معاملہ کہا ہے اورایسا ہوتا نہیں ہے کہ فوج کی جانب سے بھی بیان آئے ۔

دنیانیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے خورشید قصوری نے کہا کہ چائنہ نے مناسب سمجھاہے کہ چینی صدر کے ہندوستان جانے سے پہلے پاکستان کے وزیر اعظم چینی قیادت کو مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے آگاہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ چینی صدر کے ذہن میں یہ بات ہوگی کہ بھارت وزیر اعظم عمران خان کے دورہ چین کو پسند نہیں کرے گا اور بھارت نے پسند نہیں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت اچھی چیز یہ ہے کہ امریکہ ، روس ، چین اوربرطانیہ یہ چاہ رہے ہیں کہ مسئلہ کشمیر حل ہوناچاہئے ، پاکستان اوربھارت آپس میں بات چیت کریں۔

خورشید قصور ی نے کہا کہ اس وقت بھارت پر دباﺅ بہت زیادہ ہے اور مسئلہ یہ ہے کہ یہ مسئلہ جنگ سے حل نہیں ہوگا، عالمی کمیونٹی کی ذمہ داری ہے کہ جنگ کوروکے لیکن مودی نے اپنے آپ کو ایک کونے میں جاکر پھنسا لیاہے ، کشمیر میں کرفیوکے ہوتے عمران خان بھارت سے بات چیت نہیں کرسکتے لیکن اب مودی کے لئے بھی ممکن نہیں ہے کہ جس گھوڑے پر وہ بیٹھ گیاہے ، اس سے نیچے آئے ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورے کی خاص بات یہ ہے کہ چینی فوج کی جانب سے بھی بیان جاری کیا گیاہے ، چینی فوج نے کشمیر کے معاملہ کو اصولی معاملہ کہا ہے اورایسا ہوتا نہیں ہے کہ فوج کی جانب سے بھی بیان آئے ۔

مزید : قومی


loading...