پختونخوا اولسی تحریک کے زیراہتمام پشاور پر یس کلب میں سیمینار کا انعقاد 

  پختونخوا اولسی تحریک کے زیراہتمام پشاور پر یس کلب میں سیمینار کا انعقاد 

  

پشاور(سٹی رپورٹر)پختونخوا اولسی تحریک کے زیر اہتمام مہمند ایجنسی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے تحصیل صافی،بائزئی اور خوائزی کے خاصہ داروں کے کیساتھ ظلم کے خلاف پشاور پریس کلب میں  سمینار کا انعقاد کیا گیاپختونخوا اولسی تحریک کے رہنما ڈاکٹر سید عالم محسو د،یوسف انور رحیم شاہ ایڈوکیٹ  اور دیگر رہنماوں  نے شرکت کی جبکہ متاثرہ خاصہ داروں  اور صافی قوم کے عمائدین نے بھی سمینار میں شرکت کی اس موقع رپر شرکاء نے سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مہمند ایجنسی میں 1974سے بھرتی صافی،بائزئی  اور خوائرئی کے 1000خاصہ دار 2008میں ائی ڈی پی بنا دیئے گئے،ضلعی انتظامیہ نے اُن کو کہا کہ آپ لوگ ڈیوٹی پر نہیں لہذا آپ کی تنخواہ بند کر دی گئی ہے تاہم جب  یہ لوگ واپس اپنے علاقے گئے تو ان کو بتایا گیا کہ آپ کو نوکریاں ختم کر دی گئی ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ ایک ماہ قبل اگست میں بھی ان کے نام پر تنخواہیں آتی رہی انہوں نے کہا کہ خاصہ داروں کے نام پر تنخواہ کوئی اور لینے لگے جسمیں ایسے افرادد بھی شامل ہے جو پاکستان سے باہر ممالک میں ہے سمینار سے شرکاء نے کہا کہ خاصہ دار کو مہینہ 35000ہزار تنخواہ ملتی تھی جو ضلعی انتظامیہ ہر ماہ اصول کرتی رہی جو کہ سالانہ تین کروڑ روپے بنتی ہے جبکہ 12سال میں پانچ ارب چالیس کروڑ روپے بنتے ہے جو ضلعی انتظامیہ  اپس میں بندر بانٹ کرتے ہیں جو  خاصہ داروں کے معاشی قتل کے مترادف ہے جبکہ انکے قربانیوں کی تذلیل ہے جو انہوں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں دی ہے انہوں نے کہا کہ کچھ خاصہ داروں کی نوکریاں  پیسو کے وعوض فروکت کی گئی جو کسی ظلم سے کم نہیں انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے خاصہ دارون کی تنخواہ میں خورد برد کا نوٹس لیکر انصاف فراہم کیا جائے واضح رہے کہ ضلع مہمند تحصیل صافی کے متاثرہ خاصہ داروں نے گزشتہ روز احتجاجی مظاہرے بھی کیے تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -