کورونا سے مزید 9افراد جاں بحق، 583نئے کیس، 497مریضوں کی حالت نازک

      کورونا سے مزید 9افراد جاں بحق، 583نئے کیس، 497مریضوں کی حالت نازک

  

 اسلام آباد، لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، لیڈی رپورٹر) ملک میں کورونا وائرس سے مزید 9 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 6 ہزار 544 ہوگئی۔ پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 3 لاکھ 16 ہزار 934 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 583 نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک بھر میں اب تک 37 لاکھ 61 ہزار 389 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 31 ہزار 168 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 3 لاکھ 2 ہزار 375 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 497 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ این سی او سی نے پاکستان میں کورونا کیسز بڑھنے پر تشویش کا اظہار کر دیا۔این سی او سی کا کورونا کی صورتحال پر اہم اجلاس ہوا، جس میں کورونا کی صورتحال اور ایس او پیز کے تحت کھولے جانے والے شعبوں کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ پاکستان میں مجموعی طور پر صورتحال بہتر ہے تاہم عوامی اجتماعات، ریسٹورنٹس اور شادی ہالز کورونا کے پھیلاؤ کے مراکز بن چکے ہیں، عوامی مقامات پر ماہرین صحت کی ہدایات پر عمل نہیں ہو رہا۔این سی او سی اجلاس میں کورونا کی ممکنہ دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے جامع حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا گیا اور شراکت داروں سے مشاورت کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ اتفاق رائے کے بعد آئندہ چند روز میں نئی حکمت عملی پر عملدرآمد شروع ہو جائے گا۔ اس موقع پر وفاقی وزیر اسد عمرنے کہا کہ کورونا سے نمٹنے میں قومی کامیابیوں کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے۔طبی ماہرین نے دنیا کہ ایران میں ایک روز کے دوران کورونا سے 239 ہلاکتیں ہوئیں، بھارت میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے، بھارت میں کورونا کی شدت میں کمی کے کوئی آثار دکھائی نہیں دے رہے۔ادھر سکولوں میں کورونا ایس او پیز کیخلاف ورزی کے معاملہ پرسکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے صوبہ بھر کی ایجوکیشن اتھارٹیز کے سربراہان کو سکولوں میں کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کردی۔سکول سٹاف دوران ڈیوٹی فیس ماسک لازمی استعمال کریں گے۔ معاشرتی فاصلہ قائم رکھنے کے ساتھ طلبا ہاتھ ملانے سے گریز کریں۔ سکول و دفاتر کو روزانہ کی بنیاد پر ڈس انفیکٹ لازمی کیا جائے۔ کورونا سے متعلق آگاہی کیلئے کلاس رومز میں پمفلٹس آویزاں کرائے جائیں۔ 

کورونا ہلاکتیں 

مزید :

صفحہ اول -