جامعہ کراچی میں طالبات کو ہراساں کرنے پر 7 ملزمان گرفتار

جامعہ کراچی میں طالبات کو ہراساں کرنے پر 7 ملزمان گرفتار

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جامعہ کراچی میں رات گئے طالبات کو ہراساں کرنے پر 7کم عمر ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔جامعہ کراچی کے کیمپس سیکورٹی ایڈوائزر ڈاکٹر معیز خان نے بتایا کہ جامعہ کراچی کی حدود میں پیش آنے والے واقعے پر افسوس ہے، 5 اکتوبر کو یہ واقعہ پیش آیا تھا اور 7 اکتوبر کو جامعہ کراچی انتظامیہ کو درخواست موصول ہوئی، واقعے میں ملوث لڑکوں کی گزشتہ رات ہی نشاندہی کرلی گئی تھی۔سیکورٹی ایڈوائزر نے بتایا کہ گزشتہ رات کارروائی کرتے ہوئے 7 مشتبہ لڑکوں کو حراست میں لیا گیا ہے، مشتبہ لڑکوں کی عمر 16 سے 20 سال ہے، واقعے پر آئی بی اے، جامعہ کراچی اور رینجرز رابطے میں ہیں، تمام کارروائی قانون کے مطابق ہوگی، لڑکے کم عمر ہیں اور جامعہ کے اسٹاف کے بچے ہیں۔ڈاکٹر معیز خان نے کہا کہ شناخت کے لئے شکایت کنندہ کو بلایا گیا، متاثرہ افراد کو ان کی شناخت کرنی ہے، شناخت کا عمل مکمل ہوجانے کے بعد مزید کارروائی کی جائے گی، سوشل میڈیا پر جامعہ کراچی محفوظ نہیں کا ٹرینڈ چلانا غلط ہے۔واضح رہے کہ سوشل میڈیا پر زیر گردش اطلاعات کے مطابق گزشتہ شب ساڑھے 11 بجے ایک طالب علم اور طالبہ اپنی گاڑی میں جامعہ سے واپس آرہے تھے جب انہیں لڑکوں کے ایک گروپ نے جامعہ میں روک کر ہراساں کرنے کی کوشش کی تھی۔

مزید :

صفحہ آخر -