شیخوپورہ، فیکٹریوں کا زہر یلا دھواں بیماریاں پھیلانے لگا، شہری سراپا احتجا ج

  شیخوپورہ، فیکٹریوں کا زہر یلا دھواں بیماریاں پھیلانے لگا، شہری سراپا ...

  

 شیخوپورہ (بیورورپورٹ) فیصل آباد رروڈ کی رہائشی کالونی شاہین ولاز کے مکینوں نے مقامی فیکٹریز سے نکلنے والے زہریلے دھویں، سالڈ ویسٹ کو مختلف مقامات پر پھینکے جانے اور کیمیکل زدہ پانی مقامی نالوں اورراجباہوں میں بہانے کے خلاف شدید احتجاج کیا مظاہرین  غلام رسول بھٹی، محمد عمران عثمانی، احمد رضا ورک، محمد سعید، نوید احمد، محمد شریف، حاجی محمد رؤف، محمد طاہر فاروق، سمیع اللہ سراء، محمد عارف، سعید احمد، محمد نوید و دیگر سینکڑوں مقامی رہائشیوں نے بتایا کہ علاقہ میں قائم مختلف فیکٹریز میں واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹس نصب نہیں ہیں زہریلا گندہ پانی مقامی نالوں اور راجباہوں میں بہایا جارہا ہے جس سے فصلیں بھی متاثر ہورہی ہیں اور اس زہریلے پانی کے زیر زمین پانی میں شامل ہونے سے یہ پانی بھی پینے لائق نہیں رہا۔ مقامی آبادیاں یہ زہر آلود پانی پی رہی ہیں جس سے بڑی تعداد میں مقامی رہائشی مختلف بیماریوں کا شکار ہورہے ہیں جبکہ سالڈ ویسٹ بھی فیکٹریوں سے نکال کر ارد گرد پھینکی جارہی ہے جس سے زمینی آلودگی میں بھی اضافہ ہوا ہے جبکہ سب سے ابتر صورتحال فضائی آلودگی کی ہے جس نے لوگوں کی ناک میں دم کررکھا ہے۔فیکٹریوں کی چمنیوں سے نکل کر ہوا میں شامل ہونے والے زہریلے دھویں کے سبب لوگوں کی صحت بری طرح متاثر ہورہی ہے متاثر ہونے والوں میں زیادہ تعداد بچوں کی ہے، مقامی سکولوں کے بچوں کی بڑی تعداد مختلف بیماریوں کا شکارہوچکی ہے اور صحت کو لاحق بیماریوں کی بھرمار کے باعث لوگ نقل مکا نی پر مجبور ہیں، ہم نے بار بار درخواستیں دیں مگر شنوائی نہیں ہوسکی مجبور ہوکر سڑکوں پر نکلے ہیں اگر مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو دھرنا دیکر روڈز بلاک کریں گے متعلقہ اعلیٰ حکام فوری صورتحال کا نوٹس لیں اور اصلاح و احوال یقینی بنائیں۔ 

زہریلا دھواں  

مزید :

صفحہ آخر -