بہاولپور میں چھاپے،چالان، کیمسٹوں نے احتجاج کی دھمکی دیدی

      بہاولپور میں چھاپے،چالان، کیمسٹوں نے احتجاج کی دھمکی دیدی

  

 بہاول پور (بیورورپوررٹ)  محکمہ صحت کی جنوبی پنجاب بالخصوص بہاولپور کیساتھ امتیازی پالیسی کو مسترد کرتے ہیں, محکمہ صحت کے افسران نے روش نہ بدلی تو کیمسٹ(بقیہ نمبر3صفحہ6پر)

 برادری احتجاج پر مجبور ہو جائیگی. ان خیالات کا اظہار صدر کیمسٹ ایسوسی ایشن بہاولپور شاہد حسن نے ہول سیل ڈیلرز کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا. انہوں نے کہا کہ حکومت کو چاہیے ہوش کے ناخن لے,بہاولپور اور پنجاب بھر کے کیمسٹوں کے ساتھ کسی قسم کی کوئی زیادتی برداشت نہیں کی جائے گی۔اس موقع پر وفد نے صدر کو اپنے تحفظات اور کاروبار میں درپیش مشکلات بارے آ گاہ کیا۔صدر کیمسٹ ایسوسی ایشن نے وفد کو اپنے مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈرگ ایکٹ 2017 سابقہ حکومت کا ایک ایسا کالا قانون ہے جس میں سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔شاہد حسن کا مزید کہنا تھا کہ کرونا کی وبا کے بعد ملکی معیشت پہلے ہی خستہ حالی کا شکار ہے ایسے میں سابقہ حکومت کی ناقص پالیسیوں پر عمل درآمد سے لاکھوں افراد کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے۔اس موقع پر سرپرست کیمسٹ ایسوسی ایشن محمد اخلاق کا کہنا تھا کہ شیڈول جی کے نفاذ اور سابقہ حکومت کی عوام دشمن ہیلتھ پالیسی سے ملک میں ادویات کی شدید قلت کا خطرہ ہے. ملک میں مہنگائی پہلے ہی خطرناک حد تک بڑھ چکی ہے اور اس حکومتی اقدام سے مہنگائی کے ستائے ہوئے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جائے گا. صدر کیمسٹ ایسوسی ایشن شاہد حسن نے ہیلتھ افسران کو بھی متنبہ کیا کہ وہ فی الفور لائسنس یافتہ کیمسٹوں کو ہراساں کرنا اور ان کے ناجائز طریقے سے چالان کرنا بند کر دیں۔ان کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں کیمسٹوں کے لئیے کاروبار جاری رکھنا ناممکن ہوتا جا رہا ہے۔محکمہ ہیلتھ کے افسران نے بہاولپور کے لئیے امتیازی پالیسی بنا رکھی ہے جس کی آ ڑ میں کیمسٹوں کو ناجائز طور پر تنگ کیا جا رہا ہے۔اس امتیازی سلوک کی وجہ سے بہاولپور کے لوگوں میں احساس محرومی بڑھتا جا رہا ہے۔شاہد حسن کا کہنا تھا اگر محکمہ ہیلتھ کے افسران نے اپنی روش نہ بدلی تو کیمسٹ برادری احتجاج پر مجبور ہو جائے گی۔

احتجاج

مزید :

ملتان صفحہ آخر -