رحیم یارخان:ایک ہی رات میں 7وارداتیں، لاکھوں کا سامان غائب

    رحیم یارخان:ایک ہی رات میں 7وارداتیں، لاکھوں کا سامان غائب

  

 رحیم یارخان (بیورو رپورٹ)ضلع رحیم یارخان میں پولیس چوری کی وارداتوں کو کنٹرول کرنے میں ناکام ایک ہی رات میں چوری کی 7وارداتیں،شہری موٹرسائیکلوں،موٹرز،واشنگ مشین،موبائل فونز،بیٹری،سامان کریانہ سے محروم،  چوری کا پہلا واقعہ تھانہ سی ڈویڑن کی حدود گلشن عثمان کے رہائشی محمد نوید کے ساتھ پیش آیا جہاں نامعلوم ملزمان اسکے گھر کے باہر کھڑی 85ہزار مالیت کی موٹر سائیکل چرا کر فرار ہوگئے،دوسرا واقعہ تھانہ احمد پور لمہ کی حدود چک32/NP(بقیہ نمبر6صفحہ6پر)

کے رہائشی شاہد علی کے ساتھ پیش آئی جہاں 2نامعلوم ملزمان اسکی 90ہزار مالیت کی موٹرسائیکل چرا کر فرار ہوگئے،تیسری واردات تھانہ ظاہر پیر کی حدود چاچڑاں شریف کے رہائشی غلام مصطفی کے ساتھ پیش آئی جہاں دو ملزمان علی عباس وغیرہ نے اسکی 14ہزار مالیت کی موٹرسائیکل چرا کر فرار،چوتھی واردات تھانہ سی ڈویڑن کی حدود حسین آباد کے رہائشی محمد عاطف کے ساتھ پیش آئی جہاں نامعلوم ملزم نے اس کی دکان کی چھت میں نقب لگا کر 1لاکھ49ہزار 5سو روپے مالیت کی موٹریں،واشنگ مشین،پنکھے اور استریاں چرا لی،پانچویں واردات تھانہ کوٹ سمابہ کی حدود گوٹھ رضا کا رہائشی محمد افضل کے ساتھ پیش آئی جہاں 2ملزمان صابر وغیرہ نے گورنمنٹ بوائز پرائمری سکول بستی پکی سے اس کی 60ہزار روپے مالیت کی بیٹری چرالی،چھٹی واردات تھانہ رکن پور کی حدود سردار گڑھ کا رہائشی سجاد احمد کے ساتھ پیش آئی جہاں نامعلوم ملزمان نے اسکی دکان میں نقب لگا کر 58ہزار روپے مالیت کا سامان کریانہ چرا لیا، ساتویں واردات تھانہ اقبال آباد کی حدود ڈیرہ شمس کا رہائشی وسیم اختر کے ساتھ پیش آئی جہاں ملزم جاوید نے اسکا 30ہزار روپے مالیت کا موبائل فون چرا لیا،جبکہ چوری کی آٹھویں واردات تھانہ احمد پور لمہ کی حدود بستی اللہ آباد کا رہائشی محمد نصیر کے ساتھ پیش آئی جہاں 2نامعلوم ملزمان نے اسکا 13ہزار روپے مالیت کا موبائل فون چرا لیا،ملزمان فرار،مالکان کی رپورٹ پر پولیس نے ان وارداتوں میں ملوث ملزمان کیخلاف مقدمات درج کرلئے،واضع رہے ضلع بھر میں چوری کی آئے روز بڑھتی ہوئی وارداتوں کے باعث شہریوں میں خوف ہراس کی لہر دوڑ گئی ہے،پولیس وارداتوں کو کنٹرول کرنے میں بری طرح ناکام،سماجی،کاروباری اور عوامی حلقوں نے آئی جی پنجاب،آر پی او بہاولپور سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر پولیس اصلاح کرتے ہوئے وارداتوں پر قابو پایا جائے۔

وارداتیں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -